قیدی نمبر 241383 کی پہلی رات جیل میں کیسے گزری

قیدی نمبر 241383 کی پہلی رات جیل میں کیسے گزری

اسلام آباد (نیاٹائم) ہنسی کےدوران لوٹ پوٹ ہوتےدکھائی دینے والے روڈ ریج کیس میں گرفتار کانگرسی رہنما اور سابق بھارتی کرکٹر نوجوت سنگھ سدھو کو میڈیکل چیک اپ کے بعد گزشتہ روز پٹیالہ جیل کامکین بنادیا گیا ہے ۔

 

میڈیارپورٹس کےمطابق پنجاب کانگریس کےسابق صدر نوجوت سنگھ سدھو نے گزشتہ روز پٹیالہ جیل میں قیدی کی حیثیت سےپہلی رات گزاری جہاں اب وہ قیدی نمبر 241383 بن گئے ہیں۔جیل کے اندر جانے کے بعد،ہرقیدی کی طرح نوجوت سنگھ سدھو کو ایک قیدی نمبر الاٹ کیا گیا اور بیرک نمبر 10 میں منتقل کیا گیا، جہاں وہ قتل کی سزا کاٹنے والے 8 قیدیوں کے ساتھ سیل شیئرکرتے ہوئےانہیں اپنی جگتوں سےمحظوظ کریں گے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق جیل ذرائع نے بتایا کہ بیرک میں سدھو سیمنٹ سے بنے بستر(سیمنٹ سیل) پر سوئیں گے۔

 

بھارتی میڈیارپورٹ کے مطابق سدھو کی جیل میں گزشتہ شام 7 بجکر 15 منٹ پردال اور روٹی سے تواضع کی گئی۔ تاہم انہوں نے خراب صحت کا حوالہ دیتےہوئے وہ کھانےسےہاتھ جوڑکرانکار کیا اور صرف سلاد اور کچھ پھل کھانے پراکتفاکیا۔

 

دوسری جانب سدھو کے میڈیا ایڈوائزر کاکہناہے کہ نوجوت سنگھ سدھو کو گندم سے الرجی ہے اور وہ جگر کے مرض میں مبتلاہیں ،اس لیے انہوں نے خصوصی خوراک کی اپیل کی ہے، وہ کافی عرصے سے روٹی نہیں کھا رہے اور ا±نہوں نے جیل منتقلی سے قبل ہونے والے طبی معائنے کے دوران بھی اس کے بارے میں معالج اورجیل حکام کو معلومات دی تھیں۔

 

بھارتی میڈیا کے مطابق نوجوت سنگھ سدھو کوجیل میں ان کے سٹیٹس کےمطابق سفید کرتا پاجامے کے چار سیٹ، ایک کرسی میز، ایک الماری، دو پگڑیاں، ایک کمبل، ایک بیڈ، ایک بنیان، دو تولیےاور ایک مچھر دانی فراہم کی گئی ہے اور ساتھ ہی کاپی، ایک قلم، جوتوں کا ایک جوڑا، دو بیڈ کور اور دو تکیے کے کور بھی دیے گئے ہیں۔

 

یاد رہے کہ نوجوت سنگھ سدھو کو 1988 کے روڈ ریج کیس میں ایک سال قید کی سزا سنائی گئی۔روڈ ریج مقدمے میں نوجوت سنگھ سدھو پریہ الزام لگایاگیا کہ 27 دسمبر 1988 کو سدھو نے گرنام سنگھ نامی شخص کے سر پر مکّامارا تھا جس سے ان کی موت ہوئی تھی۔

 

آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ سےبرادراسلامی ملک کے وزیر دفاع کی ملاقات

 

 

قیدی نمبر 241383 کی پہلی رات جیل میں کیسے گزری