صدر بم دھماکے کے تانے بانے بھارت سے ملنے لگے

صدر بم دھماکے کے تانے بانے بھارت سے ملنے لگے

کراچی(نیا ٹائم) کراچی میں کاؤنٹر ٹیرر ازم ڈپارٹمنٹ(سی ٹی ڈی) کے ہاتھوں مقابلے میں ہلاک ملزم کے حوالے سے مزید انکشافات سامنے آگئے۔

 

اس سلسلے میں صوبائی مشیر اطلاعات سندھ  مرتضیٰ وہاب کی قیادت میں سی ٹی ڈی پولیس حکام نے ایک نیوز کانفرنس میں اس دہشت گرد گروپ کے بارے میں تفصیلات جاری کیں۔ اس موقع  پر ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی عمران یعقوب منہاس اور ڈی آئی جی سی ٹی ڈی سندھ خرم علی بھی موجود تھے۔ مرتضیٰ وہاب نے بتایا کہ رواں ماہ بارہ  مئی کوکراچی کے علاقے  صدر میں ہونے والے بم دھماکے میں ملوث ایک ملزم اللہ ڈنو کل ماڑی پور میں محکمہ انسداد دہشتگردی(سی ٹی ڈی ) اور حساس ادارے کی کارروائی میں ہلاک ہوا جبکہ اس دوران ملزم کا ایک ساتھی بھی مارا گیا جس کی شناخت کا عمل جاری ہے ۔

 

اس موقع پر ڈی آئی جی سی ٹی ڈی خرم علی نے بتایا کہ صدر دھماکے میں ملوث اللہ ڈنوپڑوسی ملک سے کام کررہی دہشت گرد تنظیم سے رابطے میں تھا۔ اللہ ڈنو مختلف ریاست مخالف احتجاج اور دیگر سرگرمیوں میں بھی شامل تھا۔خرم علی نے کہا کہ ملزم اللہ ڈنو بم بنانے کا ماہر اور تربیت یافتہ تھا اورریلوے لائن پر دھماکوں کیلئے بھی اللہ ڈنو نے آئی ای  ڈیز تیار کی تھیں۔ ملزم صدر بم دھماکے کے لیے ساڑھے 5کلو میٹر پیدل سائیکل لیکر آیا تھا اور اس نے متعددمقامات پر سائیکل کھڑی کرنے کی کوشش کی لیکن  ارادہ بدل کر آگے بڑھتا رہا۔ملزم نے صدر میں ایک مقام پر سائیکل کھڑی کی اور قریبی ہوٹل  میں جا کر بیٹھ گیا تھا۔

 

 

کراچی میں بڑھتی دہشتگردی،پولیس کی شہریوں سےاپیل