وزیر خارجہ بلاول بھٹو کا افغان طالبان سے اہم مطالبہ

وزیر خارجہ بلاول بھٹو کا افغان طالبان سے اہم مطالبہ

نیویارک(نیا ٹائم)وزیرخارجہ بلاول بھٹوزرداری کا کہنا ہے ملک کے وسیع ترمفاد میں  اتحادی حکومت بنائی جس کا مقصد جمہوریت اورمعیشت کودرپیش خطرات سے موثر انداز میں نمٹنا ہے۔

 

امریکی ٹی وی  چینل کو انٹرویو میں چیئرمین  پیپلزپارٹی بلاول بھٹو  کا کہنا تھا کہ پاکستان میں اس وقت اتحادیوں کی حکومت ہے جبکہ ملک کو اس وقت جمہوریت اورمعیشت کے بحران  سمیت دہشت گردی اورانتہاپسندی کے خطرات کا سامنا ہے۔ مختلف منشوراورنکتہ نظررکھنے والی سیاسی جماعتوں کےملکرحکومت بنانے کا مقصد ان خطرات سے موثر طریقے سے نمٹنا ہے۔ اتحادی حکومت میں شامل جماعتیں الیکٹورل اورجمہوری اصلاحات کیلئے ملکرکا م کریں گی۔بلاول بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ انتہاپسندی اوردہشت گردی کیخلاف اقدامات اوراسلام کا پرامن پیغام پھیلانے کیلئے کام کرتے رہیں گے۔پاکستان کو دہشت گردی کے بڑھتے ہوئے واقعات پرتشویش ہے اورہم افغان حکومت کیجانب دیکھ رہے ہیں کہ وہ اس سلسلے میں اپنا کردار ادا کرے۔

 

پاکستانی وزیرخارجہ کا مزید کہنا تھا کہ ہم اپنی جانب سے صورت حال کا نہ صرف بغورجائزہ لے رہے ہیں بلکہ دہشت گردی پرقابو پانے کیلئے اقدامات بھی کررہے ہیں۔توقع ہے کہ افغان حکومت بین الاقوامی معاہدوں کی پاسداری کرتے ہوئے اپنی سرزمین دہشت گردی کیلئے استعمال نہیں ہونے دے گی۔بلاول بھٹو نے کہا کہ پاکستان نے افغان مسئلے کے حل کیلئے ہمیشہ مذاکرات اورسفارت کاری کی حمایت کی ہے اوراس موقف پرتنقید کا سامنا بھی کیا اورآخرکار عالمی برادری کو بھی یہی راستہ اپنانا پڑا۔یہ پاکستان یا کوئی دوسرا ملک نہیں بلکہ عالمی سپر پاور امریکا خود تھا جس نے طالبان سےافغان دارالحکومت  کابل میں ان کی حکومت قائم ہونے سے قبل ڈائریکٹ  رابطہ اورمذاکرات کیے اوردونوں کےمابین معاہدہ بھی ڈائریکٹ ہوا۔

 

 

بھارت کااپناالزام،اپنی عدالت اوراپناہی فیصلہ