پاکستانی وفد آئی ایم ایف سے مذاکرات کیلئے قطر روانہ

پاکستانی وفد آئی ایم ایف سے مذاکرات کیلئے قطر روانہ

اسلام آباد(نیا ٹائم)عالمی مالیاتی ادارے(آئی ایم ایف) سے قرض پروگرام کی بحالی کیلئے مذاکرات آج قطری دارالحکومت دوحہ میں شروع ہوں گے جس کیلئے  پاکستانی وفد دوحہ روانہ ہوگیا ہے۔

 

بین الاقوامی مالیاتی ادارے(آئی ایم ایف) سے قرض پروگرام کی بحالی کیلئے آج شروع ہونے والے مذاکرات  پچس مئی تک جاری رہیں گے اورمذاکرات کامیاب ہونے کی صورت میں پاکستان کو1 ارب ڈالر کی قسط فوری طورپر جاری کرنے کی سفارش کی جائے گی۔آئی ایم ایف حکام کیساتھ بات چیت کےدوران پاکستانی وفد کی قیادت سیکرٹری خزانہ کریں گے جبکہ وفد میں سٹیٹ بینک، ایف بی آراور توانائی کی وزارت کے نمائندے  بھی شامل ہوں گے۔ٹیکنیکل مذاکرات کے بعد وزیر خزانہ  مفتاح اسماعیل پالیسی مذاکرات میں شریک  ہوں گے۔

 

عالمی مالیاتی ادارے  نے پٹرول، بجلی اور گیس پر سبسڈی ختم کرنے کا مطالبہ کر رکھا ہے جبکہ آئی ایم ایف نے واشنگٹن میں مذاکرات کے دوران کیے جانے والے وعدوں کو بھی اہم قرار دیا ہے۔ ان میں سبسڈی کا مکمل خاتمہ اور فیڈرل بورڈ آف ریونیو(ایف بی آر) کی جانب سے اگلے بجٹ کے دوران ٹیکس وصولیوں کے ہدف میں  گیارہ سو ارب روپے سے زائدکا اضافہ شامل ہے۔ پاکستان میں آئی ایم ایف کی نمائندہ ایستھر پیرز ریز کا کہنا ہے  کہ معاشی استحکام کے لیے ضروری ہے کہ پاکستان ان پالیسیوں پرعملدآمد کرے جن پر سابقہ حکومت سے  واشنگٹن میں  گفتگوہوئی تھی۔

 

 

حکومت کا لگژری اشیا کی امپورٹ پر مکمل پابندی کا فیصلہ