افغان خواتین میں خود کشی کا رجحان بڑھ گیا

افغان خواتین میں خود کشی کا رجحان بڑھ گیا

کابل (نیا ٹائم  ویب ڈیسک )افغان صوبے بدخشاں  کی خواتین میں خود کشی کا رجحان بڑھنے لگا ،تین ماہ کے دوران 30 افرادنے زندگیاں ختم کرنے کی کوشش کی جن میں سے اکثریت خواتین کی تھی ۔

بدخشاں ہسپتال کے ترجمان کے مطابق گزشتہ تین ماہ کے دوران ہسپتال میں منتقل کئے گئے متاثرین میں سے دو افراد زندگی کی بازی ہار گئےجبکہ دیگر کی زندگیاں بچا لی گئیں ۔

گزشتہ 3 ماہ کے دوران اقدام خود کشی کے 29 کیسز سامنے آئے جن میں سے 27 خواتین تھی جبکہ دو مردوں نے بھی خود کشی کی کوشش کی ۔

خواتین میں خود کشی کے بڑھتے رجحان کی بنیادی وجہ گھریلو تشدد اور غربت کو قرار دیا جارہا ہے ۔ جس کے باعث خواتین زنگیاں ختم کرنے جیسے انتہائی اقدام پر مجبور ہو رہے ہیں جبکہ اس کی دوسری بڑی وجہ گھر کے سربراہ کا بھی موجودہ حالات میں بیروزگار ہونے کو قرار دیا جا رہا ہے جس سے معاشی حالات خراب ہو رہے ہیں اور تنگدستی میں بھی اضافہ ہو رہا ہے ۔

بدخشاں ہسپتال کے ترجمان کے مطابق حالیہ دنوں میں خود کشی کرنے والے ایک شخص کی بیوہ نے کہا کہ بیروزگاری کے بعد ان کے گھریلو مسائل بے پناہ اضافہ ہوا ہے جس سے ان کے شوہر نے زندگی کا خاتمہ کیا جبکہ دوسری خاتون کا کہنا تھا کہ وہ اور ان کے شوہر دونوں ہی طویل عرصے سے بیروزگار تھے ۔ ایسے معاشی حالات میں بچوں نے کسی چیز کا تقاضا کیا تو اسے خریدنے کیلئے بھی پیسے نہیں تھے جس کے باعث وہ ہر وقت پریشان  تھے اسی لیے ان کے شوہر نے خود کشی کی ۔

صوبائی حکام کی طرف سے صوبے میں میں خود کشی کے بڑھتے ہوئے رجحان کو تشویشناک قرار دیا ہے ۔ دوسری طرف عوام کا کہنا ہے کہ خراب معاشی حالات ہر گزرتے دن کے ساتھ مسائل میں بھی اضافہ کر رہے ہیں ۔ جس سے لوگوں میں خود کشی کا رجحان بڑھ رہا ہے ۔

 

یمن میں کئی برسوں بعد پہلی کمرشل پروازکی اڑان