ادارے تباہ ہو جائیں تو ملک تباہ ہو جاتے ہیں ، عمران خان

ادارے تباہ ہو جائیں تو ملک تباہ ہو جاتے ہیں ، عمران خان

صوابی (نیا ٹائم)سابق وزیر اعظم عمران خان نے صوابی میں پاکستان تحریک انصاف کے جلسے سے خطاب کے دوران حکومت کو سخت تنقیدکا نشانہ بناتے ہوئے کہا ہے کہ ہم اس حکومت کو نہیں مانتے فوری طور پر نئے انتخابات کروائے جائیں ۔

پاکستان تحریک انصاف کے کھلاڑیوں نے گوہاٹی سٹیڈیم صوابی میں میدان سجایا ، پاکستان تحریک انصاف کے جلسے کیلئے سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کئے گئے تھے ۔

سابق وزیر اعظم عمران خان نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کارکنوں سے کہا کہ جب بھی میں اسلام آباد آنے کی کال دوں تو آپ سب نے گرمی اور موسم کی پرواہ کئے بغیر آنا ہے ۔

انہوں نے مزید کہا کہ اگر ایک بار ادارے تباہ ہوجائیں تو ملک تباہ ہو جاتے ہیں ۔ ایف آئی اے ہماری آنکھوں کے سامنے تباہ ہو گیا ہے ۔ ایف آئی اے کے ساتھ وہی کچھ ہوا ہے جو ماضی میں ایم کیو ایم نے پولیس کے ساتھ کیا تھا ۔ پیپلز پارٹی کی حکومت چلی گئی ، نواز شریف نے بھی ایم کیو ایم سے سمجھوتہ کر لیا ۔ ایم کیو ایم نے آپریشن کرنے والے پولیس افسران کو چن چن کر قتل کیا ۔ انہوں نے کہا کہ کراچی میں پولیس آج تک اپنے پاوں پر کھڑی نہیں ہو سکی ۔ پولیس جب کچھ نہ کر سکی تو رینجرز کو طلب کرنا پڑا ۔

عمران خان نے مزید کہا کہ وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ پر ایف آئی اے میں 24 ارب کے کیسز ہیں ۔ لندن میں بیٹھ کر اس کے بھائی ملک کے فیصلے کر رہا ہے وہ سزا یافتہ ہے او اس کی بیٹی کو ملک میں پروٹوکول دیا جا رہا ہے ۔ جو خود ضمانت پر ہہے ۔ انہوں نے کہا کہ ہم چوروں کی حکومت کو تسلیم نہیں کرتے ۔ ہماری صرف ایک ہی ڈیمانڈ ہے کہ ملک میں انتخابات کرواو ۔

 

وزیر خارجہ بلاول بھٹو دو روزہ دورے پر 18 مئی کو امریکا روانہ ہوں گے