پیٹرول پر سبسڈی ہٹانے کے متعلق فیصلہ آج ہونے کا امکان

پیٹرول پر سبسڈی ہٹانے کے متعلق فیصلہ آج ہونے کا امکان

 اسلام آباد(نیاٹائم)حکومت کی جانب سے پٹرولیم مصنوعات پر سبسڈی ختم کرنے کے حوالے سے فیصلہ آج کیے جانے کا امکان ہے۔

 

ساری سبسڈی ختم ہوئی تو ایک لیٹرپیٹرول پینتالیس روپے پندرہ پیسے بڑھ کر 195 روپے کا ہوگا جبکہ فی لیٹرڈیزل کی قیمت 230 روپے تک پہنچ جا پہنچے گی۔یہاں ایک بات ذہن میں رہے کہ پی ڈی ایم کی مشترکہ حکومت عدم اعتماد کی تحریک کی کامیابی سے قبل تحریک انصاف کی حکومت کو قیمتیں بڑھانے پر تنقید کا نشانہ بناتی تھی لیکن اب موجودہ حکومت اپنے بیانیے سے مکر گئی ہے اور پٹرول کی قیمت مستحکم نہ ہونے کی وجہ پی ٹی آئی کا آئی ایم ایف سے پیٹرول منہگا کرنے کا وعدہ کرکے آخری دنوں میں قیمت منجمد کرنا بتارہی ہے۔

 

ملکی موجودہ معاشی صورتحال کے سلسلے میں نامور کاروباری شخصیات نے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتیں بڑھانے کی سپورٹ کردی ہے جبکہ عام آدمی اس پر شدید تنقید کررہا ہے۔ دوسری طرف وفاقی وزيراطلاعات مریم اورنگزيب نے کہا کہ جب عمران خان کو پتا چل گیا تھا کہ ان کو شکست ہورہی ہے تو انہوں نے پیٹرول پرغیرقانونی سبسڈی فراہم کی۔

 

16 مئی سے پیٹرول مہنگا ہونے کا امکان