گرفتار پی ٹی آئی رہنما اورکارکن کس شرط پر رہاہوئے

گرفتار پی ٹی آئی رہنما اورکارکن کس شرط پر رہاہوئے

سیالکوٹ(نیاٹائم)پاکستان تحریک اںصاف قیادت کی طرف سے جلسہ کامقام تبدیل کرنے کی یقین دہانی پرعثمان ڈارسمیت دیگرکارکنوں کورہاکردیاگیا، پولیس نے بلااجازت مسیحی برادری کے سی ٹی آئی میدان میں جلسہ کرنے کی کوشش پر پی ٹی آئی رہنما عثمان ڈار سمیت متعدد کارکنوں کو گرفتارکیاتھا تاہم کچھ دیر بعد انہیں اس شر ط پر رہا کردیا گیا کہ پی ٹی آئی جلسے کامقام تبدیل کرنے پرتیارہے۔

 

میڈیارپورٹس کےمطابق پی ٹی آئی رہنما عثمان ڈار نے اجازت نہ ملنے کے باوجودسیالکوٹ میں چرچ کی زمین پر جلسہ منعقد کرنے کی کوشش کی۔ ضلعی انتظامیہ نے پی ٹی آئی قیادت کو جلسے کی جگہ تبدیل کرنے کا پیغام بھیجاجسے پی ٹی آئی قیادت نے ماننے سے انکار کردیا۔ جلسہ گاہ تبدیل نہ کرنے پر پولیس حرکت میں آگئی ، پولیس کی طرف سےشیلنگ اورلاٹھی چارج کیاگیاجس کے نتیجے میں کئی کارکن اوررہنماوں کی گرفتاریاں عمل میں لائی گئیں۔

 

پولیس ذرائع کاکہناہے عثمان ڈار، عمر ڈار، حافظ حامد رضا، علی اسجد ملہی، مہر کاشف، سعید احمد ، بیرسٹر جمشید غیاث بھلی کوحراست میں لے لیاگیاتھا۔ پولیس نے لاٹھی چارج کرکے جلسہ گاہ سے پی ٹی آئی کارکنوں کو منتشر کردیا اور گراؤنڈ کوبھاری مشینری کیساتھ خالی کروالیا۔ بعدازاں تمام گرفتارکارکنوں کو رہا کرکے تھانہ لیسر کلاں سے واپس سیالکوٹ روانہ کردیا گیا۔

 

واضح رہےکہ شدید تنقید کے بعد پی ٹی آئی نے اپنے جلسے کا مقام بدلا اور شام 6 بجے مدثر شہید روڈ وی آئی پی گراؤنڈ میں پنڈال سجانے کافیصلہ کیا۔ پی ٹی آئی نے نئے مقام پرجلسہ کی تیاریاں شروع کردیں ،نئے پندال سجانے کی وجہ سےجلسہ لیٹ ہونے کا خدشہ ہے۔

 

جہاں پی ٹی آئی کا جھنڈا، وہیں جلسہ شروع ہو جائے گا،سابق وزیرکادعوی