صدر مملکت نے وزیرا عظم کی سمری مسترد  کر دی

صدر مملکت نے وزیرا عظم کی سمری مسترد  کر دی

اسلام آباد (نیا ٹائم) گورنر پنجاب عمر سرفراز چیمہ کو عہدے سے ہٹانے کیلئے وزیر اعظم شہباز شریف کی صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کو بھجوائی گئی ایڈوائس صدر مملکت نے مسترد کر دیا ۔

ایوان صدر کی طرف سے جاری کئے گئے اعلامیہ کے مطابق صدر مملکت نے کہا ہے کہ گورنر پنجاب کو صدر پاکستان کی منظوری کے بغیر کسی صورت نہیں ہٹایا جا سکتا ۔ آئین کے آرٹیکل 101 کی شق 3 کے مطابق گورنر صدر مملکت کی رضامندی تک عہدے پر قائم رہے گا ۔

صدر مملکت نے مزید کہا ہے کہ گورنر پر نہ تو بد انتظامی کا کوئی الزام ہے نہ ہی اسے کسی عدالت سے سزا ہوئی ہے ، گورنر پنجاب نے نہ ہی آئین کی خلاف ورزی کی ہے جس کی بنیاد پر انہیں ہٹایا جا سکے ۔ صدر کا فرض ہے کہ آئین کے آرٹیکل 41 کے تحت پاکستان کی نمائندگی کرے ۔

صدر عارف علوی نے کہا ہے کہ گورنر پنجاب نے پنجاب اسمبلی میں پیش آنے والے ناخوشگوار واقعہ پر رپورٹ بھی مجھے ارسال کی تھی ، گورنر پنجاب نے وزیر اعلیٰ پنجاب کے استعفے اور وفاداروں کی تبدیلی پر بھی پورٹ بھجوائی تھی ، مجھے یقین ہے کہ گورنر کو عہدے سے ہٹانا غیر منصفانہ اور انصاف کے منافی ہے ۔ آرٹیکل 63 اے ممبران اسمبلی کی خرید و فروخت  کی اجازت نہیں دیتا ۔

صدر مملکت نے مزید کہا کہ اس مشکل وقت میں دستور پاکستان کے اصولوں پر قائم رہنے کے لیے مکمل طور پر پر عزم ہوں ، گورنر پنجاب کو ہٹانے کیلئے وزیر اعظم کی طرف سے بھجوائی گئی ایڈوائس کو مسترد کرتا ہوں ۔ ضروری ہے کہ موجودہ گورنر ہی صاف جمہوری نظام کی حوصلہ افزائی کیلئے عہدے پر موجود رہیں ۔

واضح رہے گورنر پنجاب کو ہٹانے کیلئے وزیر اعظم شہباز شریف کی طرف سے دوسری سمری یکم مئی کو ایوان صدر بھجوائی گئی تھی ۔

آج وفاقی وزیر داخلہ رانا ثنا اللہ نے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ صدر مملکت وزیر اعظم کی  ایڈوائس کے پابند ہیں ،اور اس کی خلاف ورزی آئین شکنی کے مترادف ہے ۔ صدر مملکت ، گورنر پنجاب آئین و سپریم کورٹ کے احکامات کے مطابق چلیں ، خلاف ورزی نہ کریں ۔

وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ نے کہا تھا کہ پارلیمانی جمہوریت میں صدر کا منصب علامتی ہوتا ہے ان کے پاس ویٹو کا اختیار نہیں  ہوتا ، ایوان صدر پاکستان تحریک انصاف کا سیکرٹریٹ نہیں ہے ۔ صدر مملکت عمران خان کے غلام نہ بنیں اور آئین پر چلیں۔ عمر چیمہ شرافت سے گھر چلے جائیں ۔ آئین شکنی کرنے والوں کو آئین و عدالت اور عوام کی سزا کیلئے بھی تیار رہنا ہو گا ۔

 

عمران خان نے ایبٹ آباد میں کس کا ہیلی کاپٹر استعمال کیا