سابق پاکستانی کرکٹر کو میچ فکسنگ الزامات میں بڑا ریلیف مل گیا

سابق پاکستانی کرکٹر کو میچ فکسنگ الزامات میں بڑا ریلیف مل گیا

لاہور(نیاٹائم)انٹرنیشنل کرکٹ کونسل نے پاکستان کے سابق کرکٹرمنصوراخترکو فکسنگ الزامات سے بڑا ریلیف دیتے ہوئے کلیئرکردیا ہے۔

 

تفصیلات کے مطابق آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کے سینئرمینجر اسٹیو رچرڈسن کی طرف سے منصوراخترکو لیٹر لکھا گیا جس میں کہا گیا کہ آپ پر الزامات کے حوالےسے جاری انوسٹی گیشن کو ختم کردیاگیاہے اورفکسنگ کا کوئی چارج نہیں عائد کیا گیا ہے، تاہم اگر فیوچر میں اس حوالےسے کوئی نئے ثبوت سامنے آئے تودوبارہ اس کیس کو اوپن کیاجاسکتاہے۔

 

خیال رہے کہ اکتوبر2019 میں گلوبل ٹی ٹوئنٹی لیگ میں پاکستانی کرکٹر عمر اکمل کی طرف سے منصور اختر پر فکسنگ کیلئے اپروچ کرنے کا الزام عائدکیاگیا تھا،بیرون ملک مقیم منصور اختر اس ٹیم کے ساتھ جڑےہوئے تھے جس کی طرف سے عمراکمل نے کھیل رہے تھے،عمر نے پی سی بی اور آئی سی سی کو بتایا تھا کہ منصوراختر کی طرف سے ان کو میچز کے دوران فکسنگ پراکسایا گیا تھا۔

 

انٹرنیشنل کرکٹ کونسل(آئی سی سی)کے اینٹی کرپشن یونٹ نے عمر اکمل کی طرف سے لگائے گئے میچ فکسنگ الزامات پر قومی ٹیم کے سابق کرکٹر منصور اخترکی  کم وبیش دو سال سے زائد عرصہ تک انوسٹی گیشن کی، 19 ٹیسٹ اور 41 ون ڈے میچوں میں قومی ٹیم کی نمائندگی کا اعزاز رکھنے والے منصور اختر نے آئی سی سی کے اینٹی کرپشن یونٹ کے آفیسراسٹیو رچرڈسن سے بھرپور تعاون کیا تھا۔

 

پاکستانی ٹیم کادورہ سری لنکامحدودکردیاگیا