ایران نے درست اور اصولی راستہ اپنایا ، بشار الاسد

ایران نے درست اور اصولی راستہ اپنایا ، بشار الاسد

تہران (نیا ٹائم   ویب ڈیسک ) شام کے صدر بشار الاسد نے ایران کے سپریم لیڈر آیت اللہ سید علی خامنہ ای سے تہران میں ملاقات کی، دونوں رہنماوں کے درمیان باہمی دلچسپی کے امور پر اتفاق کیا گیا  ۔

ایرانی سرکاری میڈیا رپورٹ کے مطابق آیت اللہ خامنہ ای نے موجودہ سیاسی اور عسکری میدانوں میں شام کی شاندار کامیابیوں کو ذکر کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ شام پہلے جیسا شام نہیں ، اگرچہ اس وقت شام کو آج جیسی صورتحال کا سامنا نہیں تھا تاہم شام کی ساکھ اور وقار ماضی کی نسبت اب زیادہ بہتر ہے ۔

بین الاقوامی جنگ میں شام کی مزاحمت کا حوالے دیتے ہوئے سپریم لیڈر نے صدر بشار الاسد کو پرعزم اور باہمت حکمران قرار دیا  جو جنگ میں کامیابی کے بعد شام کی کی تعمیر نو کے خواہشمند ہیں ۔

آیت اللہ خامنہ ای نے شہید کمانڈر قاسم سلیمانی کا حوالے دیتے ہوئے کہا کہ لیفٹیننٹ جنرل سلیمانی نے شام کی دہشت گردوں کے خلاف جنگ پر خصوصی توجہ دی ۔ انہوں نے ایران کے خلاف عراق کی مسلط کردہ جنگ  کی مثال تازہ کر دی ۔ انہوں نے ان قربانیوں کا بھی ذکر کیا جو شہید سلیمانی نے شام کیلئے دی تھیں ۔

آیت اللہ خامنہ ای نے کہا کہ ایران اور شام کے درمیان باہمی تعلقات کو مزید وسعت دینے کی ضرورت ہے ۔ انہوں نے شامی حکومت پر زور دیا کہ وہ دونوں ریاستوں کے درمیان تعلقات مزید بہتر بنانے اور روابط بڑھانے کا موقع کسی صورت ہاتھ سے نہ جانے دیں ۔

دوسری طرف شامی صدر بشار الاسد نے اپنے بیان میں کہا کہ علاقائی مسائل بالخصوص فلسطین کے معاملے پر گزشتہ چا دہائیوں کے دوران ایرانی حکومت کے موقف نے سب پر عیاں کر دیا کہ ایران کا اپنایا گیا راستہ درست اور اصولی تھا ۔

 

شدت پسندوں نے 11مصری فوجیوں کی جان لے لی