عمران خان 4 سالہ کارکردگی کی بات نہیں کرتے ، شہباز شریف

عمران خان 4 سالہ کارکردگی کی بات نہیں کرتے ، شہباز شریف

بشام (نیا ٹائم)وزیر اعظم شہباز شریف نے شانگلہ کے علاقے بشام میں جلسے سے خطاب کے دوران کہا ہے کہ آج نواز شریف کے شیر  کے گھر آیا ہوں ، بطور وزیر اعظم خیبر پختونخوا کا یہ میرا پہلا دورہ ہے ۔

انہوں نے کہا کہ جب تک جان میں جان ہے دن رات انتھک محنت کروں گا اور انشاء اللہ جلد کے پی کو عظیم صوبہ بنا دوں گا ۔ انہوں نے اپنے خطاب کے دوران شرکاء سے سوال کیا کہ کے پی میں تحریک انصاف کے دور حکومت میں کتنے ہسپتال بنے ؟ کتنے مفت علاج کئے ، انہوں نے کہا کہ جو یہاں کے وزیر اعلیٰ ہیں وہ عوام کو سستا آٹا فراہم کریں ، اگر کر دیں گے تو ان کا شکریہ نہیں کریں گے تو میں اپنے کپڑے بھی بیچ کر عوام کو سستا آٹا فراہم کروں گا ۔ انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخوا کی ہر دکان پر سستا آٹا دستیاب ہو گا ، آٹے کی جو قیمت پنجاب میں ہو گی وہی کے پی میں بھی ہو گی ۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے مزید کہا ملک ترقی کرے گا تو خیبرپختونخوا بھی ترقی کرے گا ۔

انہوں نے کہا کہ غداری اور حب الوطنی کے سرٹیفکیٹ تقسیم کئے جا رہے ہیں ، عمران خان اپنی تقریروں میں اپنی چار سالہ حکومت کے دوران کارکردگی کی بات نہیں کرتا ۔شہباز شریف نے مزید کہا کب تک ہم کشکول لے کر در در پھریں گے ،  بھیک مانگیں گے ، کشکول لے کر پھرنے والوں کو دنیا میں عزت نہیں ملتی ۔ رونے دھونے سے کچھ حاصل نہیں ہو گا ، خون پسینہ ایک کرنے سے ہی ملک و قوم کی غربت اور بھکاری پن دور ہو گا ۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے شانگلہ میں میڈیکل کالج بنانے کا بھی اعلان کیا ، بشام کو 2 ارب روپے گرانٹ دینے کا بھی اعلان کیا ۔ انہوں نے کہا پوران گرڈ سٹیشن 3 ماہ کے اندر مکمل کرنے کا اعلان کیا ۔

وزیر اعظم شہباز شریف نے مزید کہا کہ جب تک وزیر اعظم رہا ، عوام سے نہ جھوٹ بولوں گا نہ ہی ان سے جھوٹے وعدے کروں گا ، اگر کہیں غلطی ہوئی تو عوام کو گواہ بنا کر ان سے معافی مانگوں گا ۔

انہوں نے کہا کے پی سمیت پورے ملک میں مفت ادویات دیں گے ، پچھلے حکومت نے ملکی تاریخ میں سب سے زیادہ قرضے لئے ۔ 4 سال کے دوران کوئی نیا منصوبہ شروع نہ کیا جا سکا بس نواز شریف کے منصوبوں پر اپنے نام کی تختیاں ہی لگائیں ۔

وزیر اعظم نے کہا کہ آج ان بزرگوں کی روحیں تڑپ رہی ہوں گی کہ انہوں نے اپنی جانوں کا نذرانہ دے کر جو پاکستان بنایا تھا یہ وہ تو نہیں ہے ۔

 

پیپلزپارٹی کےوفدکی حمزہ شہبازسےملاقات کی اندرونی کہانی