گوگل کی پہلی سمارٹ واچ کا نام جانیئے

گوگل کی پہلی سمارٹ واچ کا نام جانیئے

امریکا(نیاٹائم ویب ڈیسک)گوگل کی طرف سے پہلی سمارٹ واچ 2022 میں کسی وقت متعارف کرائے جانے کا امکان ہے اور اب اس کا نام بھی سامنے آچکا ہے۔

 

ویسے تو یہ پہلے ہی یقینی تھا کہ اسے پکسل واچ کہا جائے گا مگر اب اس کی  تصدیق ہوچکی ہے کیونکہ گوگل نے پکسل واچ ٹریڈ مارک کو رجسٹر کروایاہے۔گوگل کی طرف سے ٹریڈ مارک کو 19 اپریل کو رجسٹر کرایا تھا اور اس سےمتعلق بتایا تھا کہ یہ سمارٹ واچز اور ایسیسریز کیلئے ہے ۔ٹریڈ مارک میں یہ بھی تھا کہ یہ سمارٹ واچ میٹل، لیدر، پلاسٹک، سیلیکون یا ربڑ پر مشتمل ہوگی، جس سے عندیہ ملتا ہے کہ گوگل کی طرف سے کئی واچ بینڈز کو متعارف کروایا جائے گا۔

 

اس سے پہلےایک لیک میں بتایا گیا تھا کہ گوگل سمارٹ واچ کو مئی 2022 میں پیش کیا جاسکتا ہے تاہم اب یہ مشکل نظر آتا ہے۔گوگل کی آئی او ڈویلپر کانفرنس ہرسال مئی میں ہوتی ہے۔دسمبر 2021 میں ایک رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ کسل واچ کا کوڈ نام روہن رکھا گیا ہے۔پکسل واچ کے خاکوں سے اشارہ ملتا ہے کہ اس میں گول ڈائل ڈسپلے ہوگا جس میں بیزل نہیں ہوگا جب کہ  یہ سمارٹ واچ دل کی دھڑکن کی رفتار اور قدموں کی تعداد کو بھی ٹریک کرے گی۔

 

گوگل پکسل واچ سےمتعلق افواہیں تو بہت  عرصے سے سامنے آرہی ہیں لیکن  اب تک کمپنی کی طرف سے سمارٹ واچ بنانے والی کمپنیوں جیسے سام سنگ کو اینڈرائیڈ سافٹ ویئر ہی مہیا کیے جارہے ہیں جبکہ  ہارڈ ویئر پر کام نہیں ہورہا۔اس سمارٹ واچ کو گوگل کا پکسل ہارڈ ویئر گروپ بنائے گا اور اس کیلئے فٹ بٹ سے ہیلپ نہیں لی جائے گی۔

 

واضح رہے کہ فٹ بٹ سمارٹ ٹریکر کمپنی گوگل نے کچھ ٹائم  پہلے خرید لی تھی۔بنیادی طور پر گوگل کی سمارٹ واچ کی تیاری کا مقصد ایپل واچ کامقابلہ کرنا ہے۔

 

ایلون مسک کی پیشکش پرٹویٹرکاایک مرتبہ پھرغور