مشکل معاشی فیصلے کرنا ہوں گے ، مفتاح اسماعیل

مشکل معاشی فیصلے کرنا ہوں گے ، مفتاح اسماعیل

لندن (نیا ٹائم ویب ڈیسک ) وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل کا کہنا ہے اس سال بجٹ خسارے کا ہو گا جس کے باعث مشکل معاشی فیصلے کرنا ہوں گے ، انہوں نے کہا کہ نئے انتخابات ہی ملکی مسائل کا حل ہیں تاہم ملک کو پٹری پر ڈال کر نئے انتخابات کی طرف جائیں گے ۔ 

وفاقی وزیر خزانہ واشنگٹن آئی ایم ایف سے مذاکرات کیلئے جانے سے قبل لندن پہنچے جہاں انہوں نے قائد مسلم لیگ ن نواز شریف اور سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار سے ملاقات کی ۔ 

میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مفتاح اسماعیل نے کہا کہ معاشی حالت کی بہتری اہم ترین مسئلہ ہے ، نواز شیف نے ہدایتکی ہے کہ عوام پر کسی صورت مزید بوجھ نہ ڈالا جائے ، سبسڈی ختم نہ کی گئی تو پھر مزید قرض لینا پڑے گا ۔ 

وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ اس سال خسارے کا بجٹ پیش ہو گا ، مشکل فیصلے بھی کرنا پڑیں گے ، عمران حکومت نے پہلے ہی ریکارڈ قرض لے لئے ہیں ، اتنا ٹیکس جمع نہیں ہوا جتنا ن لیگ چھوڑ کر گئی تھی ۔ 

انہوں نے کہا کہ نئے انتخابات ہی ملکی مسائل کا حل ہیں ، نگران حکومت آئی ایم ایف سے مذاکرات نہیں کر سکتی تھی ، اس لیے ملک کو پٹری پر ڈال کرانتخابات کی طرف جائیں گے ۔ 

انہوں نے کہا کہ سابق حکومت نے جان بوجھ کر اور اپنی نااہلی سے آئی ایم ایف سے کئے گئے وعدے توڑے م، پاکستان مہنگائی میں دنیا میں تیسرے نمبر پر ہے ،عمرانخان نے اپنی نااہلی اور بدعنوانی کے باعث تاریخ رقم کی ہے ۔

 
وزیر خزانہ آئی ایم ایف سےمذاکرات کیلئے امریکا روانہ