زر مبادلہ کے ذخائر میں بڑی کمی ہو گئی

زر مبادلہ کے ذخائر میں بڑی کمی ہو گئی

کراچی ( نیا ٹائم ) سٹیٹ بینک آف پاکستان نے پاکستان کے زر مبادلہ ذخائر کی رپورٹ جاری کر دی ، جس کے مطابق زر مبادلہ ذخائر میں بڑی کمی ہو گئی ہے ۔ رپورٹ کے مطابق غیر ملکی قرضوں کے سود کی ادائیگی کی وجہ سے ذخائر میں 84 کروڑ 60 لاکھ ڈالرز کمی ہوئی ۔

سٹیٹ بینک آف پاکستان کی رپورٹ میں 21 جنوری تک کے اعداد و شمار شامل کئے گئے ہیں جن کے مطابق ملکی زر مبادلہ کے ذخائر 84 کروڑ 60 لاکھ ڈالر کم ہوئے ۔ گزشتہ ہفتے ہی غیر ملکی قرضوں کا سود اور غیر ملکی قرضوں کی ادائیگیاں کی گئی تھیں ۔

ترجمان سٹیٹ بینک کا کہنا ہے غیر ملکی ادائیگیوں کے بعد سرکاری زر مبادلہ ذخائر 16 ارب 19 کروڑ 1 لاکھ ڈالر کی سطح پر پہنچ گئے ہیں ۔ رپورٹ کے مطابق سٹیٹ بینک کے ذخائر 16 ارب ڈالرز ، جبکہ غیر ملکی سرمایہ کاری 651.1 ملین ڈالرز اور کمرشل بینکوں کے پاس 6 ارب 29 کروڑ ڈالرز کے ذخائر موجود ہیں ۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ ملکی زر مبادلہ کے ذخائر میں مجموعی طور پر کمی کے بعد 22 ارب 48 کروڑ 21 لاکھ ڈالرز کی سطح تک پہنچ گئے ہیں ۔

دوسری جانب وزارت خزانہ کی جانب سے جاری کی گئی آؤٹ لک رپورٹ کے مطابق سٹیٹ بینک کے ذخائر میں 16 ارب ڈالرز اور غیر ملکی سرمایہ کاری 651.1 ملین ڈالرز تک پہنچ چکی ہے ، برآمدات ، ایف بی آر ٹیکسز آمدن اور صنعوں کی پیداوار اور ترسیلات زر میں بھی بڑا اضافہ ہوا ہے ۔

 

7 سال میں پہلی بارخام تیل کی قیمت 90 ڈالر فی بیرل سے تجاوز