وزیراعلیٰ سندھ کی ایم کیو ایم رہنما امین الحق کو فون پر پیشکش

وزیراعلیٰ سندھ کی ایم کیو ایم رہنما امین الحق کو فون پر پیشکش

کراچی(نیا ٹائم ) وزیر اعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما اور وفاقی وزیر امین الحق کو فون کر کے واقعے پر افسوس کا اظہار کیا۔

وزیر اعلیٰ سندھ نے ایم کیو ایم پاکستان کے رہنما سے کہا کہ ایسے واقعات کسی صورت نہیں ہونے چاہئیں۔ سیاسی اختلافات کو مذاکرات اور سیاسی طریقوں سے حل کیا جائے۔ اس موقع پر دونوں رہنماؤں نے اتفاق کرتے ہوئے کہا کہ واقعے کو لسانیت کا رنگ نہیں دیا جائے گا۔ دونوں فریقین نے لسانیت کے حوالے سے بیانات کی بھی مذمت کی۔

 

مراد علی شاہ نے ایم کیو ایم رہنما کو یقین دلایا کہ پوسٹ مارٹم سے موت کی وجہ سامنےآجائے گی۔وفاقی وزیر امین الحق نے ٹنڈوالہیار واقعے پر حکومتی اقدامات پر اطمینان کا اظہار کیا اور دونوں رہنماؤں نے مستقبل میں ایسی صورتحال پیدا نہ کرنے پر بھی اتفاق کیا۔

 

وزیر اعلیٰ سندھ نے کہا کہ وہ واقعے کی انکوائری کریں گے اور جو بھی ملوث ہوا اس کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ وزیر اعلیٰ سندھ نے امین الحق سے نئے لوکل گورنمنٹ ایکٹ پر بات کرنے کی پیشکش بھی کی جس پر امین الحق نے کہا کہ وہ پارٹی کی مشاورت سے جواب دیں گے۔

 

خیال رہے کہ گزشتہ روز کراچی میں وزیراعلیٰ ہاؤس جاتے ہوئے ایم کیو ایم پاکستان کے کارکنوں کو پولیس نے زدوکوب کیا تھا اور شیلنگ کی تھی جس میں مبینہ طور پر ایم کیو ایم کا ایک کارکن محمد اسلم جاں بحق ہوگیا تھا۔ ایم پی اے صداقت حسین سمیت متعدد افراد زخمی بھی ہوئےتھے۔

 

پرینک ویڈیوزکیوں بنائیں،طلبہ سلاخوں کے پیچھے