بھارت میں یوٹیوب اور گوگل کے افسران کے خلاف مقدمہ درج،وجہ کیابنی

بھارت میں یوٹیوب اور گوگل کے افسران کے خلاف مقدمہ درج،وجہ کیابنی

ممبئی(نیا ٹائم ویب ڈیسک) عدالتی حکم کی روشنی میں ممبئی پولیس کی جانب سے گوگل کے چیف ایگزیکٹو آفیسر اور بھارتی نژاد امریکی شہری سندر پچائی سمیت چھے افراد کے خلاف کاپی رائٹ کی خلاف ورزی کا مقدمہ درج کرلیا گیا ہے۔

 

گوگل اور یوٹیوب کے خلاف بھارتی فلم ساز اور ہدایت کار سنیل درشن نے عدالت کا رخ کیا تھا اور بتایا تھا کہ اُن کی بنائی گئی فلم کو یوٹیوب پر بغیر اجازت کے اپ لوڈ کیا گیا۔

 

سنیل درشن نے استدعا کی تھی کہ ’ایک حسینہ تھی ایک دیوانہ تھا‘ کے ہماری طرف سے کاپی رائٹ کسی کو نہیں دیے گئے، اُس کے باوجود کئی لوگوں نے فلم کے گانے اور ویڈیوز کو یوٹیوب پراپ لوڈ کردیا ہے، جس کو روکنے یا بلاک کرنے کے لیے گوگل اور یوٹیوب نے کوئی خاص اقدامات نہیں کیے۔

 

ہدایت کارنےعدالت میں استدعا کی کہ یوٹیوب پر ویڈیوز اپ لوڈ ہونے کے باعث انہیں کروڑوں روپے کے خسارے کا سامنا بھی کرنا پڑا ہے لہذا عدالت سے درخوست ہے کہ گوگل اور یوٹیوب سے اس کا ہرجانہ ادا کروائے۔درخواست گزار کی عرضی پر عدالت نے ممبئی پولیس کو مقدمہ درج کر کے قانونی کارروائی کا حکم دیا، جس کے بعد پولیس نے گوگل کے سی ای او اور دیگر چھ افسران کےخلاف مقدمہ قانونی درج کرکے تحقیقات شروع کردیں۔

 

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق ممبئی پولیس کی جانب سےعدالتی حکم کے بعد کاپی رائٹ کی خلاف ورزی کی دفعات کے تحت سندر پچائی کے خلاف مقدمہ درج کیا گیا ہے۔ مقدمے میں سندر پچائی کے علاوہ یوٹیوب کے مینجنگ ڈائریکٹر گوتم آنند سمیت گوگل کے دیگر 6 افسران کو بھی نامزد کیا گیا ہے۔

 

ڈرونز اُڑانےپرجیل کی سزا، فیصلہ کرلیاگیا