قانون کی حکمرانی کے بغیر معاشرہ ترقی نہیں کر سکتا

قانون کی حکمرانی کے بغیر معاشرہ ترقی نہیں کر سکتا

اسلام آباد(نیا ٹائم)وزیراعظم عمران خان کا کہنا  ہے  کہ قانون کی حکمرانی کے بغیر کوئی بھی معاشرہ ترقی نہیں کر سکتا جبکہ انگریز نے جانے سے پہلے پاکستان کو جو نظام دیا وہ آہستہ آہستہ نیچے جاتا گیا۔

 

اسلام آباد میں منعقدہ فوجداری قوانین میں اصلاحات کی تقریب میں وزیراعظم عمران نے وفاقی وزیرقانون  فروغ نسیم کو خراج تحسین پیش کیا۔وزیراعظم نے کہا کہ آہستہ آہستہ طاقتور خود کوقانون سے بالاتر سمجھنے لگا۔ ملک میں قانون کی حکمرانی کا نظام طاقتور طبقے نے نظرانداز کیا ہے۔ ایجوکیشن ، لاء ،ہیلتھ اور ہر شعبے میں امیر اورغریب کیلئےدو دوقانون آئے،اس ملک میں قانون صرف غریب کیلئے ہوتا تھا جبکہ  طاقت ور خود کو قانون کے نیچے نہیں لاتا تھا۔ کسی بھی معاشرے میں انصاف نہیں ہوگا تو خوش حالی  کیسے آئے گی۔

 

وزیراعظم عمران خان  کا مزید کہنا تھا کہ رسول ﷺ نے اسلامی فلاحی ریاست میں بہترین اصول رکھے تھے۔فلاحی ریاست کی جانب  ہم بڑا قدم اٹھا چکے ہیں  اور اب ہمارا انقلابی قدم قانون میں اصلاحات اور عمل کی جانب  ہوگا جبکہ  طاقتور کو چوری کی سز انہیں ملتی اور غریب  بیچاراقانون کی چکی میں پس جاتا ہے۔عمران خان نے کہاکہ سمندر پارپاکستانی ملک کا ایک بڑااثاثہ ہیں اوران کی  بھیجی  گئیں ترسیلات پر ہی  ملک چل رہا ہے۔پاکستانی جیلیں غریب عوام سے بھری  پڑیں  ہیں اور پاکستان میں عدالتی سسٹم آہستہ آہستہ کمزورہوتا گیا۔

 

 وزیراعظم عمران خان کا تقریب سے خطاب کرتے ہوئےکہنا تھا پاکستان میں سرکاری تعلیمی نظام کمزور جبکہ پرائیویٹ تعلیمی نظام بہترہوا۔بیرون ملک پاکستانی ملک میں سرمایہ کاری کرنا چاہتے ہیں مگران کوموجودہ سسٹم پر اعتماد نہیں ہے۔ عمران خان کا کہنا تھا کہ پاکستانی عدلیہ سے اپیل کرتا ہوں  کہ قانونی اصلاحات اور قانون پر عمل کروائیں تاکہ اس فرسودہ نظام سے جلد سے جلد چھٹکارہ حاصل کر پائیں۔

 

عمران خان کا  کہنا تھا کہ ریکوڈک کیس میں پاکستان کو بہت نقصان ہوا اور ریکوڈک کیس میں پاکستان  کو جرمانہ بھی  ہوا  جبکہ  ہمیں اس معاملے میں  معاشی نقصان بھی  برداشت کرنا پڑا۔ سیاحتی شعبے میں بیرون ملک قانون پرعملداری ہے وہاں کوئی قبضہ گروپ نہیں۔پاکستان میں قدرتی خوب صورتی ہے مگر قانون پر عملداری ذرا برابر بھی نہیں ہے۔وزیراعظم کا کہنا تھا کہ جب کرکٹ میں تھا تو چھ سال غیر جانبدار امپائر کیلئے مہم چلائی۔کرکٹ کے دوران میں نے ٹیکنالوجی کے استعمال کی بات کی اورمجھ پر  ہی تنقید کی گئی۔

 

 

 

پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کی سماعت براہ راست دکھانے کا مطالبہ