پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کی سماعت براہ راست دکھانے کا مطالبہ

پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کی سماعت براہ راست دکھانے کا مطالبہ

اسلام آباد(نیا ٹائم)پاکستان مسلم لیگ ن  کی مرکزی ترجمان مریم اورنگزیب نے الیکشن کمیشن آف پاکستان  سے  پی ٹی آئی فارن فنڈنگ کیس کا ریکارڈ سامنے لانے اور کیس کی سماعت  براہ راست  دکھانے کا مطالبہ کر دیا۔

 

ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب کا کہنا  تھا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان  روزانہ کی بنیاد پر پاکستان تحریک انصاف کے  غیر ملکی  فنڈنگ کیس کی سماعت کرے اور زیر التوا مسئلے پر قانون و انصاف کے تقاضے بلا تاخیر پورے کیے جائیں۔مریم اورنگزیب نے کہا کہ  موجودہ وزیراعظم  کی جعل سازی کا ایک اور ناقابل تردید ثبوت سامنے آگیا ہے۔ شوکت خانم ڈونرز کو بطور پارٹی ڈونر سکروٹنی کمیٹی رپورٹ میں ڈالنا خوف ناک انکشاف ہے۔

 

پاکستان مسلم لیگ ن کی مرکزی ترجمان کا مزید کہنا تھا کہ پینتیس فی صد ڈونرز نے پاکستان تحریک انصاف  کو چندہ نہیں دیا تھا۔جعل سازی سے پینتیس فی صد ڈونرز کی فہرست کوغیر ملکی  فنڈنگ کی فہرست میں ڈالا گیا۔مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان نے خیراتی ادارے کو منی لانڈرنگ اور سیاسی مقاصد کیلئے استعمال کیا۔وزیراعظم نے شوکت خانم ہسپتال  کے چندےکو سیاسی فنڈز میں بدل کر جرم کیا۔ غیرملکی  فنڈنگ کیس میں  آٹھ والیمز اِسی لیے چھپائےجا رہے ہیں۔

  

ترجمان پاکستان مسلم لیگ ن نے کہا کہ کرپشن، منی لانڈرنگ اور غیرملکی غیرقانونی سرمائے کی تفصیلات  کوخفیہ رکھاجا رہا ہے۔ پاکستان الیکشن کمیشن کے حکم کے مطابق سٹیٹ بینک سمیت تمام دستاویزات کو پبلک کیا جائے۔مریم اورنگزیب کا مزید کہنا تھا کہ عمران خان نے  اپنی پارٹی ملازموں  کے پرائیویٹ  اکاؤنٹس میں  بیرون ملک سے رقوم منگوائیں جبکہ عمران صاحب کے غیر ملکی بینکوں میں اکاؤنٹس کی تفصیلات آنا ابھی باقی ہے۔

 

مریم اورنگزیب کا کہنا تھا کہ الیکشن کمیشن کی سکروٹنی کمیٹی کی رپورٹ منظر عام پر آنے کے بعد بلی تھیلے سے باہر آ گئی ہے اور موجودہ پی ٹی آئی حکومت بری طرح عوام کے سامنے بے نقاب ہو چکی ہے ۔ان کا کہنا تھا کہ اب اس بات میں کوئی دو رائے نہیں ہونی چاہیئے کہ پاکستان تحریک انصاف بیرون ملک فنڈنگ پر چلتی رہی جبکہ آئین و قانون کے مطابق پاکستان کی کوئی بھی سیاسی جماعت اگر فارن فنڈنگ میں ملوث نکلے تو اسے کالعدم قراردیا جاتا ہے۔

 

 

اسٹیبلشمنٹ اوروزیراعظم کا ایک صفحے پرہونا ملک کیلئے فائدہ مند