اومیکرون کورونا کا آخری ویرئینٹ نہیں ، اقوام متحدہ

اومیکرون کورونا کا آخری ویرئینٹ نہیں ، اقوام متحدہ

لندن ( نیا ٹائم ویب ڈیسک ) اقوام متحدہ کے ماہرین نے خبردار کیا ہے کہ اومیکرون کورونا کا آخری ویرینٹ نہیں ، اس کے بعد بھی کئی شکلیں سامنے آئیں گی جس کے لیے ہمیں معاشرے کو اس مہلک وائرس سے محفوظ رکھنا ہو گا ۔

برطانوی نشریاتی ادارے کے مطابق اقوام متحدہ پروگرام کی ٹیکنیکل ماہر ماریا وین کرخوف نے کہا وائرس تیزی سے اپنی شکل تبدیل کرتے ہیں ، اب تک کورونا کی بھی متعدد شکلیں سامنے آ چکی ہیں اور اس وقت دنیا کو کورونا کی نئی قسم اومیکرون کا سامنا ہے تاہم یہ آخری ویرینٹ نہیں ہو گا بلکہ مستقبل میں مزید ویرینٹس بھی سامنے آئیں گے ۔

ماریا وین کرخوف نے مزید کہا کورونا اب بھی شکلیں بدل بدل کر سامنے آ رہا ہے ، ہمیں اپنے معمولات کو بدلنے اور خود کو صورتحال کے مطابق ڈھالنے کی ضرورت ہے ۔

انہوں نے اومیکرون کے حوالے سے بتایا کہ کچھ لوگ اومیکرون کو زیادہ مہلک نہیں سمجھ رہے تاہم ایسا نہیں کیونکہ اس سے ہسپتالوں میں مریضوں کی آمد بڑھ گئی ہے البتہ یہ حقیقت ہے کہ اومیکرون ڈیلٹا ویرینٹ کی نسبت کم ہلاکت خیز ثابت ہوا ہے ۔

ماریا وین کرخوف نے مزید کہا وبا سے بچنے کا واحد راستہ ویکسی نیشن ہے ، تاحال دنیا بھر میں 3 ارب لوگوں کو کورونا ویکسی کا ایک بھی ٹیکہ نہیں لگا ۔ دنیا بھر میں ویکسی نیشن کا عمل بڑھانا ہو گا ۔ ماسک پہننے کے ساتھ ساتھ سماجی فاصلے کا بھی خیال رکھنا ہو گا ۔

 

اومی کرون کےبڑھتے وار،شہرقائد میں سمارٹ لاک ڈاؤن نافذ