سپریم کورٹ نے ایف بی آر پر جرمانہ عائد کردیا

سپریم کورٹ نے ایف بی آر پر جرمانہ عائد کردیا

اسلام آباد(نیا ٹائم ویب ڈیسک): سپریم کورٹ کی جانب سے ایف بی آر پر غیر ضروری مقدمہ بازی کو وقت کا ضیاع قرار دیتے ہوئے 20 ہزار روپے جرمانہ عائد کردیا گیا ہے۔

 

جسٹس قاضی فائز عیسیٰ نے دو صفحات پر مشتمل فیصلہ میں قرار دیا ہے کہ ایف بی آر کی جانب سے کی جانے والی بے وقت قانونی کاروائی سے ٹریبونل ، عدالت عالیہ اور عدالت عظمی کا وقت ضائع ہوتا ہے، ایف بی آر کو چاہیے کہ وہ ٹیکس دہندگان کے ساتھ قانون کے مطابق شفاف طریقے سے معاملات چلائے اور قانونی کاروائی کرے۔ قانون کے مطابق ٹیکس ادا کرنے والوں کو جو قانونی حق حاصل ہوتا ہے ایف بی آر اس کو کسی صورت روکنے کا حق نہیں رکھتا۔ فضول قانونی کاروائی سے ایف بی آر کے وسائل ایسےغیر ضروری طور پر ضائع نہیں ہونے چاہئیں۔

 

سپریم کورٹ نے فیصلہ نجی کمپنی کے خلاف ایف بی آر کی اپیل میں جاری کیا ہے جس میں قانون کے سیکشن 66 اے کے مطابق چار سال بعد کمپنی کو نوٹس جاری کردیا جانا تھا تاہم ایف بی آر نے 11 سال بعد نوٹس جاری کیا ہے۔سپریم کورٹ کی جانب سے ایف بی آر کی درخواست کو ناقابل سماعت قرار دیا گیا ہے اور بیس ہزار کا جرمانہ عائد کیا گیا ہے۔

 

وزیراعظم عمران خان پر حق جرح ختم کرنیکا فیصلہ خلاف قانون قرار