بنڈل اور بوڈو جزائر سندھ حکومت کی ملکیت

بنڈل اور بوڈو جزائر سندھ حکومت کی ملکیت

کراچی ( نیا ٹائم ) محکمہ جنگلات سندھ نے بحیرہ عرب میں موجود بنڈل اور بوڈو جزائر کوسندھ حکومت کی ملکیت قرار دے دیا ۔  سندھ کابینہ کی منظوری کے بعد سندھ حکومت اپنے جزائر کی ملکیت کے حوالے سے نوٹیفکیشن جاری کرے گی۔

محکمہ جنگلات سندھ نے وزیر اعلیٰ سندھ کو سمری بھجوائی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ دونوں جزائر کے علاقے 1958 ء ایکٹ کے تحت پروٹیکٹو فاریسٹ قرار دئیے گئے ہیں ۔ دونوں جزائر پر محکمہ جنگلات سندھ کی ملکیت اور انڈس ڈیلٹا کا حصہ  ہے جس میں وزارت پورٹس اینڈ شپنگ یا وفاق کا کوئی حق نہیں ۔

محکمہ جنگلات نے حکومت سندھ سے درخواست کی ہے کہ 1958 ء کے جنگلات حفاظت ایکٹ کو ری نوٹیفائی کیا جائے ، جس میں پوری ساحلی بیلٹ کا ذکر کیا گیا ہے ۔ سمری میں درخواست کی گئی ہے کہ جنگلات ایکٹ میں دونوں جزائر کے نام شامل کر کے نیا نوٹیفکیشن بھی جاری کیا جائے ۔

واضح رہے دونوں جزائر پر وفاق نے نئے شہر کے قیام کے لیے 2020 ء میں صدارتی آرڈیننس پاکستان آئی لینڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آرڈیننس کے نام سے جاری کیا تھا ۔ جس پر ماحولیات کے حوالے سے کام کرنے والے اداروں نے احتجاج ریکارڈ کروایا تھا ۔صدارتی آرڈیننس میں بنڈل اور بوڈو جزائر کو تجارتی اور رہائشی مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا اعلان کیا گیا تھا ۔  

 

گوگل کا پروین رحمان کو خراج تحسین