افغانستان میں ناکامی کے بعد را پاکستان کا امن تباہ کرنا چاہتی ہے ، شیخ رشید

افغانستان میں ناکامی کے بعد را پاکستان کا امن تباہ کرنا چاہتی ہے ، شیخ رشید

اسلام آباد ( نیا ٹائم ) وفاقی وزیر داخلہ شیخ رشید احمد کا کہنا ہے بھارتی خفیہ ایجنسی را افغانستان میں ناکامی کے بعد پاکستان میں دہشتگردی چاہتی ہے ۔  

اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے وفاقی وزیر داخلہ نے کہا کہ افواج پاکستان نے ہزاروں جانوں کی قربرانی دے کر ملک میں دہشت گردی کو شکست دی ۔ ٹی ٹی پی کے خلاف کامیابی حاصل کر لی تاہم اب بھی اکا دکا گروپ وارداتیں کر رہے ہیں ۔انہوں نے کہا اسلام آباد میں دو دہشت گردوں کو ہلاک کیا جس کا اعتراف ٹی ٹی پی نے بھی کیا ۔  بلوچ ریپبلکن آرمی اور یونائیٹڈ بلوچ آرمی کے گروپس نے اکٹھے ہو کر بلوچ نیشنلسٹ ( بی این اے ) آرمی بنائی ۔ جوچھوٹا سا گروپ ہے ۔

شیخ رشید نے کہا یہ حملے قوم کے مورال کا شکست نہیں دے سکتے ۔ ٹی ٹی پی ہمارے ساتھ جنگ کرے گی تو انہیں بھرپور جواب دیں گے ۔ داعش سے کوئی مذاکرات نہیں ہوئے ۔ انہوں نے واضح کیا کہ تحریک طالبان پاکستان نے ایسی سخت شرائط رکھیں تھیں جو قابل قبول نہیں تھیں ، جس کے بعد بات آگے نہ بڑھ سکی ۔ سیز فائر طالبان کی طرف سے ختم کیا گیا ۔ انہوں نے ایک بار پھر تحریک طالبان پاکستان کو آفر دی کہ اگر وہ قانون اور آئین کے جھنڈے تلے آ جائیں تو ہمارے دروازے ان کے لیے کھلے ہیں ۔ تاہم اگر وہ لڑیں گے تو ان کے خلاف لڑائی کریں گے ۔

شیخ رشید نے کہاآج افغانستان میں پہلے کی طرح پاکستان مخالف ماحول نہیں ، طالبان نے 42 عالمی قوتوں اور را اور این ڈی ایس کو شکست دی ۔ جو اب پاکستان میں چھوٹے گروپس کی ذریعے دہشتگردی کی فضا قائم کرنا چاہتے ہیں تاہم انہیں شکست دیں گے ۔

وزیر داخلہ نے کہا اپوزیشن اسلام آباد آنا چاہے تو آکر شوق پورا کر لے ، عمران خان خوش نصیب ہیں جو انہیں اتنی نااہل اپوزیشن ملی ۔ حکومت کہیں نہیں جا رہی ۔ انہوں نے اپوزیشن کو تنبیہہ کرتے ہوئے کہا کہ اگر آپ قانون ہاتھ میں لیں گے تو قانون آپ سے پوری قوت سے نپٹے گا ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اپوزیشن نے ٹریکٹر ریلی نہیں ریڑھا ریلی نکالی ہے ۔ فنانس بل کی منظوری کے وقت ان کے 12 لوگ کم تھے جبکہ عدم اعتماد میں 25 ووٹ کم ہوں گے ۔

شیخ رشید نے کہا جو لوگ کہتے ہیں حکومت جا رہی ہے ان کی عقل کام نہیں کر رہے ۔ اگر اپوزیشن نے جمہوریت کو نقصان پہنچانے کی غلطی کی تو اس سے  ان کا نقصان ہو گا ۔

انہوں نے کہا لاہور دھماکے کے ایک ملزم کو تلاش کر رہے ہیں ، جس کے قریب تو نہیں البتہ اس کے پیچھے چل پڑے ہیں ۔ انہوں نے واضح کیا کہ ایمرجنسی اور صدارتی نظام کا شور ہے تاہم ابھی اس پر کابینہ میں بحث نہیں ہو رہی ۔

 

نوازکی واپسی پر شیخ رشید کو پریشانی کی ضرورت نہیں