پولیس کے خوف سے قیدی موبائل فون نگل گیا

پولیس کے خوف سے قیدی موبائل فون نگل گیا

دہلی(نیا ٹائم ویب ڈیسک): بھارت کی جیل میں قید ایک مجرم پولیس سے خود کو بچانے کے لیے موبائل فون ہی نگل گیا۔

 

بھارتی میڈیا رپورٹ کے مطابق دہلی کی تہاڑ جیل میں تفتیش کے دوران ایک قیدی نے پولیس کے ہاتھوں پکڑے جانے کے خوف سے موبائل فون ہی نگل لیا۔پولیس کے مطابق آپریشن کرنے کے بعد قیدی کے جسم سے موبائل فون نکال لیا گیا، اس کے  پیٹ میں پڑے موبائل فون سے متعلق ایکسرے کی مبینہ ویڈیو بھی منظرِ عام پر آئی ہے۔

 

رپورٹ کے مطابق ڈاکٹرز اینڈواسکوپی کے ذریعے اس کے پیٹ میں سے موبائل فون نکالنے میں کامیاب ہو گئے ہیں، اب قیدی کی حالت بھی خطرے سے باہر معلوم ہوئی ہے۔ڈائریکٹر جنرل تہاڑ جیل کا کہنا ہے کہ یہ واقع 5 جنوری کے روز جیل میں پیش آیا جب جیل حکام تفتیش کے لیے ہر سیل میں جا رہے تھے، جیسے ہی سینٹرل جیل نمبر 1 میں بند قیدی کے پاس تفتیش کے لیے پہنچے تو اس نے ڈر کے مارے فون ہی نگل لیا۔

 

عہدیداروں کا کہنا ہے کہ قیدی کو واقع کے بعد مقامی اسپتال منتقل کیا گیا اور بعد ازاں علاج کے لیے جی بی پنت اسپتال بھیج دیا گیا، کامیاب آپریشن کے بعد پیٹ سے موبائل فون نکال لیا گیا اور قیدی کو اسپتال سے ڈسچارج  کر کے وآپس جیل بھیج دیا گیا۔پولیس حکام کا کہنا ہے کہ قیدی کی حالت اب خطرے سے باہر ہے اور بہتر ہے۔اور اب وہ جیل میں ہی اپنی سزا کاٹ رہا ہے۔

 

حقیقی زندگی کا ایکوامین سامنےآگیا