نور مقدم کیس ، ملزم ظاہر جعفر مکمل فٹ قرار

نور مقدم کیس ، ملزم ظاہر جعفر مکمل فٹ قرار

اسلام آباد ( نیا ٹائم ) نور مقدم کو ذبح کر کے قتل کرنے والے ملزم ظاہر جعفر کو ڈاکٹرز نے مکمل طور پر فٹ قرار   دے دیا ہے ۔

اڈیالہ جیل ہسپتال کے ڈاکٹرز نے ملزم ظاہر جعفر کی میڈیکل رپورٹس کے بعد اسے ذہنی و جسمانی طور پر مکمل فٹ قرار دیا ہے ۔

ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ اسلام آباد میں نور مقدم قتل کیس کی سماعت کے دوران مرکزی ملزم کو سٹریچر پر کمرہ عدالت میں لایا گیا ۔ ڈاکٹرز نے دوران سماعت عدالت کو اس کی میڈیکل رپورٹس پیش کرائیں جس میں ملزم کی صحت سے متعلق تمام تفصیلات درج تھیں ۔

ڈاکٹروں کی رپورٹ کے مطابق ملزم کے متعدد ٹیسٹ کئے گئے ، میڈیکل چیک اپ کئے گئے ، ماہر نفسیات سے بھی چیک اپ کروایا گیا ۔ تمام ٹیسٹوں کے بعد ملزم کو مکمل طور پر فٹ قرار دیا گیا ۔

واضح رہے نور مقدم قتل کیس کی سماعت کے دورا ن قتل کے مرکزی ملزم کے وکیل نے یکم دسمبر کو ڈسٹرکٹ سیشن کورٹ اسلام آباد سے درخواست کی تھی کہ ملزم ذہنی مریض ہے اور اس کے چیک اپ کے لیے میڈیکل بورڈ تشکیل دیا جائے ۔

اسلام آباد کی رہائشی اور سابق سفیر کی بیٹی نور مقدم کو گزشتہ سال 20 جولائی کو اسلام آباد کے ایک بنگلے میں اس کے دوست ملزم ظاہر جعفر نے ذبح کر کے قتل کر دیا تھا ۔ نور مقدم کے والد کی مدعیت میں قتل کا مقدمہ درج کروایا گیا جس میں ظاہر جعفر کو مرکزی ملزم نامزد کیا گیا تھا ۔

 

پارلیمانی کمیٹی نے جسٹس عائشہ ملک کےنام کی منظوری دےدی