کھادکا بحران،بہاولپور میں گھونسے اوراینٹیں چل گئیں

کھادکا بحران،بہاولپور میں گھونسے اوراینٹیں چل گئیں

لاہور(نیاٹائم) کھاد کا بحران شدت اختیار کرگیا ہے،بہاولپور میں کسانوں اور ڈیلرز میں ہاتھا پائی، گھونسوں کے ساتھ اینٹوں کے استعمال کاواقعہ سامنے آیا ہے،پنجاب اور سندھ میں یوریا کھاد کی قلت ابھی تک جاری ہے  جس کے باعث کاشتکار مارے مارے پھر رہے ہیں۔

 

 بہاولپور میں کاشت کار اور کھاد ڈیلر آپس میں لڑ پڑے اور اس دوران دونوں اطراف سےگھونسوں ، مکوں کا آزادانہ استعمال ہواہے۔ایک طرف لڑنے والے  دونوں گروپس نے ایک دوسرے کو اینٹیں بھی دے ماری ہیں،کسانوں نے ڈیلرز پر الزام عائد کیا ہے  کہ کھاد ڈیلر لائن کے بغیر اور من پسند افراد کو کھاد دیئے جارہے ہیں۔

  

دوسری جانب پنجاب میں کھاد کے بحران کیخلاف تحریک التوائے کار پنجاب اسمبلی میں جمع کرادی گئی ہے،تحریک التواءکار مسلم لیگ ن کی رکن پنجاب اسمبلی رابعہ فاروقی کی جانب سےجمع کرائی گئی۔

 

تحریک التوائے کار کے متن کے مطابق کھاد کا بحران مزید شدت اختیار کر گیا ہے اور کاشتکار خوار ہونے لگے ہیں،بحران کے باعث مہنگی کھاد خریدنا مجبوری ہے لیکن دن بھر لائنوں میں لگ کر بھی کھاد نہیں مل رہی،ایک طرف کاشتکار بحران کی وجہ سے مہنگی کھاد خریدنے پرمجبور ہیں تو دوسری طرف در در خوار ہونے کے بعد بھی ان کو کھاد نہیں مل رہی۔تحریک التوائے کارمیں کہا گیا ہے کہ   کھاد کی مارکیٹ میں عدم دستیابی کے خلاف کاشت کار سراپا احتجاج ہیں اور کھاد کی ذخیرہ اندوزی سے ربیع سیزن کی فصل کی پیداوار میں کمی واقعہ ہوسکتی ہے۔

 

کھاد نہ ملنے کی وجہ سے گندم کا بحران پیدا ہونے کا خدشہ