نور عالم خان نے بغاوت کا علم بلند کر دیا

نور عالم خان نے بغاوت کا علم بلند کر دیا

پشاور ( نیا ٹائم ) پاکستان تحریک انصاف کے رہنما اور رکن قومی اسمبلی نور عالم خان نے پارٹی کے خلاف علم بغاوت بلند کر دیا ۔ ان کا کہنا ہے عوام نے جنہیں ووٹ دئیے انہیں عوام کی فکر ہی نہیں وہ سب کو اپنا غلام سمجھتے ہیں ۔

سماجی رابطوں کی ویب سائٹ پر اپنے ٹویٹ میں حکومتی وزراء کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے لکھا تین سال سے پارلیمانی پارٹی اجلاس اور پارلیمنٹ میں آواز حق بلند کر رہا ہوں ۔ لوگوں نے انہیں ( وزراء) کو ووٹ دئیے ہیں انہیں ان کی فکر ہی کوئی نہیں ۔ وہ سب کو اپنا غلام سمجھتے ہیں جو ان کے خلاف آواز بلند نہیں کریں گے ۔ تاہم وہ غلط فہمی کا شکار ہیں ۔

نور عالم خان نے مزید لکھا میں آج اور ہمیشہ احتساب اور اگلی تین قطاروں میں بیٹھنے والوں کے نام بھی ای سی ایل لسٹ میں ڈالنے کا مطالبہ کرتا ہں ۔ مافیاز ، ان کے شراکت داروں اور وفاداروں پر قابو پایا جانا چاہئے ۔

واضح رہے قومی اسمبلی میں منی بجٹ بل پیش کرنے سے پہلے وزیر اعظم کی زیر صدارت پاکستان تحریک انصاف کی پارلیمانی پارٹی کا اجلاس ہوا جس میں وزیر دفاع پرویز خٹک اور وزیر اعظم کے درمیان تلخ جملوں کا تبادلہ ہوا جبکہ رکن قومی اسمبلی نور عالم خان نے سخت سوالات کئے تھے ۔

انہوں نے اجلاس کے دوران کہا تھا کہ سٹیٹ بینک کی خود مختاری سے سلامتی کے ادارے متاثر ہو سکتے ہیں ۔ انہوں نے سوال کیا تھا کہ کیا سلامتی اداروں کے اکاؤنٹس کی تفصیلات بھی آئی ایم ایف کو دی جائیں گی ؟

وزیر اعظم نے وضاحت کی تھی کہ ملکی مفادات پر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا ، سلامتی اداروں کا تحفظ پہلی ترجیح ہے ۔ نور عالم نے اجلاس میں کہا تھا کہ حلقے کے عوام ہم سے گیس ، بجلی پانی مانگتے ہیں کیا ہم منی بجٹ سے انہیں گیس ، بجلی اور پانی دے سکیں گے ؟

پارٹی اجلاس میں سخت سوالات کرنے پر تحریک انصاف خیبرپخونخوا کے صدر اور وزیر دفاع پرویز خٹک نے نور عالم خان کو شوکاز نوٹس بھی جاری کیا تھا ۔ جس میں ان سے پارٹی امور بارے تحفظات عوامی فورم پر ظاہر کرنے کے حوالے سے وضاحت طلب کی گئی تھی ۔

 

بلدیاتی انتخابات میں لوگوں کے ضمیر خریدنے کی کوششیں جاری