مردم شماری کے لیے  ادارہ شماریات نے بڑی رقم مانگ لی

مردم شماری کے لیے ادارہ شماریات نے بڑی رقم مانگ لی

اسلام آباد(نیا ٹائم ) ملک بھر کی عوام کی گنتی کےلئےادارہ شماریات نےحکومت سے 5ارب روپےکی ڈیمانڈ کردی ہے۔

 

میڈیارپورٹس  کے مطابق مردم شماری ایڈوائزری کمیٹی نے ڈیجیٹل مردم شماری پر اپنی سفارشات پیش کر دی ہیں اور کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی آج فنڈنگ کی منظوری دے گی۔ مردم شماری ایڈوائزری کمیٹی کے مطابق نئی مردم شماری ڈیجیٹل طور پر کی جائے گی اور  ملک کے تمام بلاکس کی سطح تک ڈھانچے کی جیو ٹیگنگ کی جائے گی اور  ڈیجیٹل مردم شماری میں ہر بلاک کی ریئل ٹائم مانیٹرنگ کی جائے گی۔

 

 ذرائع کا کہنا ہے کہ ڈیجیٹل مردم شماری 18 ماہ میں مکمل ہوگی اور عام انتخابات نئی مردم شماری کے مطابق کیے جائیں گے ۔  ادارہ شماریات  کی جانب سے نئی ڈیجیٹل مردم شماری کے لیے تیاریاں شروع ہو گئی ہیں اور قومی مردم شماری کوآرڈینیشن سینٹر کے قیام کے لیے اقدامات شروع  کیے گئے ہیں۔

 

 مردم شماری کے ڈیجیٹل سافٹ ویئر کی خریداری کےعمل کا بھی  آغاز ہو گیا ہے۔ حکام نے بتایا کہ فنڈز کی منظوری کے بعد ڈیجیٹل مردم شماری کے کام میں تیزی آئے گی اور ادارہ شماریات ڈیجیٹل مردم شماری کا کام بروقت مکمل کرے گا۔

 

خیال رہے کہ کچھ عرصہ قبل  میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  وزیراعلیٰ سندھ مراد علی شاہ نےکہا تھا کہ کراچی سمیت سندھ بھر میں مردم شماری صحیح نہیں ہوئی۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ یہ نااہل لوگ آئین کی پاسداری نہیں کر رہے ہیں۔29 مئی کو انہیں نے مردم شماری کا معاملہ پارلیمنٹ میں بھی اٹھایا تھا۔

 

کورونا کیسز میں اضافہ، وفاقی کابینہ کا اظہار تشویش