ابوظہبی پر حوثی باغیوں کا ڈرون حملہ ، 3 افراد ہلاک

ابوظہبی پر حوثی باغیوں کا ڈرون حملہ ، 3 افراد ہلاک

ابوظہبی ( نیا ٹائم ویب ڈیسک ) متحدہ عرب امارات میں دو مختلف مقامات پر مبینہ طور پر حوثی باغیوں کی جانب سے ڈرون حملے کئے گئے ہیں ، جن میں 3 افراد جاں بحق ہو گئے ۔

متحدہ عرب امارات میں آئل دو مختلف آئل ٹینکرز دھماکے سے پھٹنے کے بعد آگ کی لپیٹ میں آ گئے جس کے نتیجے میں ایک پاکستانی سمیت 3 افراد جاں بحق جبکہ 6 شدید زخمی ہو ئے ۔

عالمی خبر رساں اداروں نے ابوظہبی پولیس کے ذرائع سے کہا ہے کہ شہر میں دو دھماکے ہوئے جن میں سے ایک دھماکہ 3 آئل ٹینکرز جبکہ دوسرا زیر تعمیر ائیر پورٹ پر ہوا ۔ تاہم پولیس حکام ابھی تک دھماکوں کی نوعیت سے متعلق کچھ بھی نہیں بتا رہے ہیں ۔

ابوظہبی پولیس کے مطباق دھماکوں کے بعد آئل ٹینکر پھٹنے سے آئل تنصیبات پر کام کرنے والے ایک پاکستانی اور دو بھارتیوں سمیت 3 افراد جاں بحق  ہو گئے ۔ دھماکے میں 6 افراد زخمی بھی ہوئے جنہیں ہسپتال منتقل کر دیا گیا ۔ جہاں ایک زخمی کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے ۔

متحدہ عرب امارات نے واقعہ کی ذمہ داری تاحال کسی بھی گروہ پر نہیں ڈالی ہے نہ ہی آئل ٹینکرز پھٹنے کی وجوہات سے آگاہ کیا ہے ۔ تاہم واقعہ کی تحقیقات کے لیے انکوائری کمیٹی بنا دی گئی ہے ۔

دوسری جانب یمن کے حوثی باغیوں نے ابوظہبی میں ہونے والے حملوں کی ذمہ داری قبول کر لی ہے ۔ چند روز قبل حوثی باغیوں کی جانب سے سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ کے ذریعے متحدہ عرب امارات کو نشانہ بنانے کی بھی دھمکی دی گئی تھی ۔

نئے سال کے پہلے روز حوثی باغیوں نے اسلحہ کی ترسیل کے الزام میں متحدہ عرب امرات کے یمن سے سعودی صوبے جازان جانے والے مالک بردار بحری جہاز کو بھی عملے سمیت یرغمال بنا لیا تھا ۔ جبکہ اماراتی حکام کا کہنا تھا کہ جہاز میں ایک ہسپتال کے لیے ایمبولینس اور دیگر میڈیکل کا ضروری سامان تھا ۔

واضح رہے متحدہ عرب امارات نے بھی یمن میں سعودی عرب کی سربراہی میں قائم عسکری اتحاد میں شمولیت اختیار کی تھی تاہم 2019 ء میں سرگرمیاں محدود کر دی تھیں ۔

 

ایران نے سعودی عرب میں سفارتخانہ کھولنے کا عندیہ دیدیا