نواز شریف خود کو حوالے کریں، عزت سے  لائیں گے

نواز شریف خود کو حوالے کریں، عزت سے لائیں گے

لاہور(نیاٹائم)وزیراعظم عمران خان کے مشیر برائے احتساب شہزاد اکبر کا بتانا ہے کہ برطانیہ میں مقیم نواز شریف نے خود کو صرف پاکستانی ہائی کمیشن کے حوالے کرنا ہے ،ہم  اُنہیں عزت و احترام کے ساتھ واپس لائیں گے۔

 

لاہور میں نیوز کانفرنس کرتے ہوئے شہزاد اکبر کا بتانا تھا کہ شوگر ملز کیس کے دوران رمضان شوگرملز میں منی لانڈرنگ کا علم ہوا، شہباز شریف منی لانڈرر ہیں یہ بات فائنل ہے، شہباز شریف نے جتنی درخواستیں دیں سب ریجیکٹ ہوئیں، ان کے کسی ترجمان نے سوالوں کے جواب نہیں دیئے، اُنکا ایک مؤقف ہے کہ کاروبار کا معاملہ ان کے بچوں سے پوچھیں۔

 

انہوں نے کہا کہ جب شہباز شریف وزیراعلیٰ ہوتے ہیں بچوں کا کاروبار دن رات ترقی کی منازل طےکرتےہیں، جب آپ وزیراعلیٰ نہیں ہوتے آپ کے بچوں کا بزنس بھی نہیں بڑھتا، آپ کے بچوں نے محنت کرکے رمضان شوگر مل نہیں بنائی، شہباز شریف کے ہوتے ہوئے رمضان شوگر مل بنی۔

 

مشیر احتساب نے کہا کہ بے نامی اکاؤنٹ ہولڈر ان کے ملازم تھے، بینکرز کے رول پر وفاقی تحقیقاتی ایجنسی نے رپورٹ سٹیٹ بینک کو پیش کر دی، فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی سمجھتا ہے کہ بینکرز کا کردار بطور ریگولیٹری تھا، بینکرز کے ملوث ہونے کا پروف نہیں ہے، سٹیٹ بینک اپنی ریگولیٹری پالیسی کے مطابق  کارروائی کر سکتا ہے۔

 

شہزاد اکبر نےکہا کہ نواز شریف کا کیا علاج ہوا کچھ بتایانہیں جارہا، نواز شریف کے ایشو پر شہباز شریف پر توہین عدالت کی کارروائی ہو سکتی ہے، عدالت شہباز شریف کو پابند کر سکتی ہے کہ نواز شریف کو واپس لایاجائے۔

 

ان کا مزیدکہنا تھا کہ نواز شریف ملک دشمن عناصر سے مل  سکتے ہیں تو واپس وطن  کیوں نہیں آسکتے؟ انہوں نے صرف خود کو ہائی کمیشن کے حوالےکرنا ہے، انہیں عزت اور احترام سے وطن واپس لایاجائےگا۔

 

سابق کرکٹر شعیب اختر کے گھر شہبازشریف کی آمد