حریم شاہ کے خلاف انکوائری نہیں کررہے:سی اے اے

حریم شاہ کے خلاف انکوائری نہیں کررہے:سی اے اے

کراچی(نیا ٹائم)سول ایوی ایشن اتھارٹی (سی اے اے) کے حکام نے پاکستان کی مشہورٹک ٹاکر حریم شاہ کی غیرملکی کرنسی بیرون ملک لے جانے کے معاملے پروضاحت جاری کردی ہے۔

 

تفصیلات کے مطابق سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ ہمارا اس معاملے سے کوئی تعلق نہیں ہے اور ٹک ٹاکر کے حوالے سے کوئی انکوائری نہیں کی جا رہی ہے۔ سول ایوی ایشن حکام کا کہنا ہے کہ یہ معاملہ کسٹم سے متعلق ہے اورکسٹم حکام کرنسی اور دیگرسمگلنگ کی روک تھام کے لیے پرعزم ہیں۔

 

 خیال رہے کہ پاکستان کی مشہور ٹک ٹاکرحریم شاہ نے 10 جنوری کی شب کراچی کے جناح انٹرنیشنل ایئرپورٹ سے دوحہ کا سفر کیا تھا۔سوشل میڈیا پر جاری ایک ویڈیو پیغام میں معروف ٹک ٹاکر حریم شاہ نے رقم غیرقانونی طریقے سے بیرون ملک منتقل کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔

 

ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ حریم شاہ کے بعد لاکھوں یورو ہیں۔ حریم شاہ نے ویڈیو میں دعویٰ کیا ہے کہ پہلی بار اتنی بڑی رقم بیرون ملک لانے کا پاکستان سے تجربہ ہوا۔ میں پاکستان سے بہت بڑی رقم لندن لے کرپہنچی ہوں۔بھاری رقم منتقل کرتے وقت محتاط کریں  کیونکہ حکام اسے پکڑ لیتے ہیں لیکن مجھے کوئی کچھ نہیں کہہ سکتا یہی وجہ ہے کہ میں نے بہت آسانی سے پیسے ٹرانسفر کیے ہیں۔

 

ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان کا قانون کا غریب کیلئے ہیں اس لیے محتاط کیا کریں ، پاکستانی پاسپورٹ اور پیسے کی کوئی وقعت نہیں ہیں، پاکستانی کرنسی جب یورو میں تبدیل ہوتے ہے تو تکلیف ہوتی ہے۔

 

حریم شاہ کی ویڈیو سامنے آنے کے بعد ایف آئی اے نے بھی تحقیقات شروع کردیں۔ ایف آئی اے حکام کا کہنا ہے کہ کرنسی کی غیرقانونی منتقلی منی لانڈرنگ ہے جس کے بعد ایف آئی اے نے ٹک ٹاکرکے خلاف منی لانڈرنگ کی تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔ ایف آئی اے نے حریم شاہ کے خلاف کارروائی کے لیے نیشنل کرائم ایجنسی کو خط لکھنے کا بھی فیصلہ کیا ہے۔

 

دی کراؤن میں کردار ادا کرنے والی میں ہوں:مہوش حیات