اومی کرون کے خلاف نئی ویکسین کے آزمائشی ٹرائل کا فیصلہ

اومی کرون کے خلاف نئی ویکسین کے آزمائشی ٹرائل کا فیصلہ

نیویارک (نیا ٹائم ویب ڈیسک) مشہور امریکی دواساز کمپنی فائزر نے اعلان کیا ہے کہ جلد ہی کورونا کی قسم اومی کرون کے تدارک کے لیے مخصوص ویکسین کا آزمائشی بنیادوں پر استعمال شروع کر دیا جائے گا۔

 

فائزرکے چیف سائینٹفک آفیسر مائیکل ڈولسٹن کا کہنا ہے کہ جنوری کے آخری ہفتے میں نئی کورونا ویکسین کا کورونا کے شکار مریضوں پر تجربہ کیا جائے گا۔انکا کہنا تھا کہ ویکسین کے کلینیکل ٹرائلز ہوں گے جس سے اومی کرون کے خلاف نئی ویکسین کی افادیت کا اندازہ لگایا جا سکے گا۔

 

اومی کرون کے باعث دنیا بھر میں کورونا کے مریضوں کی تعداد بہت تیزی سے بڑھ رہی ہے جس کے باعث وائرس سے اموات کی شرح میں بھی تیزی سے اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔ایسے وقت میں فائزر کی جانب سے ویکسین کے ٹرائل کے اعلان نہایت اہمیت کا حامل ہے۔

 

مائیکل ڈولسٹن کا  مزید کہنا تھا کہ کمپنی مارچ کے آخر تک اس مخصوص اور مؤثر ویکسین کو تیار کر لے گی جس کے بعد عوام ویکسین تک باآسانی رسائی حاصل کر سکیں گے۔

 

کمپنی کے ترجمان کا کہنا تھا کہ اس بات کا فیصلہ ہونا باقی ہے کہ کن ممالک میں اس ویکسین کا ہنگامی بنیادوں پر استعمال کیا جائے گا اور مہم میں کتنے رضاکاروں کو شامل کیا جائے گا۔

کمپنی کے مطابق کم شدت والی بیماری میں موجودہ ویکسین کی افادیت  زیادہ دیرپا اور مؤثر نہیں ہے لیکن اپ ڈیٹڈ ویکسین اس ضمن میں انتہائی کامیاب ثابت ہونے کی امید ہے۔اگر اس ویکسین کا ابتدائی آغاز کامیاب ہو جاتا ہے تو مارچ میں اسے مارکیٹ میں متعارف کروا دیا جائے گا۔

 

کمپنی حکام کا دعویٰ ہے کہ اس ویکسین سے کورونا کی مزید نئی قسموں کے تدارک میں کافی حد تک کامیابی حاصل ہو سکے گی۔

 

کولیسٹرول کنٹرول کرنے کا سستا اور انتہائی موثر علاج دریافت