کھاد کا مصنوئی بحران پیدا کرنے والوں کے خلاف ایکشن لوں گا: عمران خان

کھاد کا مصنوئی بحران پیدا کرنے والوں کے خلاف ایکشن لوں گا: عمران خان

اسلام آباد(نیا ٹائم)وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ حکومتی پالیسیوں سے کسانوں کی آمدنی میں 822 ارب کا اضافہ ہوا ہے۔ ملک میں 25,000 ٹن یوریا پیدا ہوتا ہے کھاد کی قلت میں ملوث لوگوں کے خلاف ایکشن لوں گا۔

 

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت یوریا کی طلب اور رسد کا جائزہ لیا گیا۔ وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ملک  25 ہزارٹن یوریا پیدا واردیتا ہے، یوریا کی پیداوارہماری ضروریات پوری کرنے کے لیے کافی ہے۔ جنہوں نے بھی کھاد کی مصنوعی قلت میں ملوث ہیں ان کے خلاف ایکشن لوں گا۔ انہوں نے کہا کہ کسانوں کو 2000 روپے کی اضافی آمدنی ہوئی ہے۔ حکومتی پالیسیوں سے 822 ارب کا اضافہ ہوا ہے، گزشتہ سال گندم، گنا، کپاس اورمکئی کی ریکارڈ پیداوار حاصل کی گئی۔

 

وزیراعظم نے ربیع سیزن میں یوریا کی بہتر فراہمی کے لیے اقدامات کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ گندم کی ریکارڈ پیداوار کے لیے یوریا کی وافر فراہمی کو یقینی بنایا جائے، کھاد کے ذخیرہ اندوزوں کے خلاف موثر اقدامات کیے جائیں اور حکومت کھاد کی مناسب مقدار کی فراہمی پر توجہ دے رہی ہے۔ ۔

 

مزید برآں، تجارتی مشیرعبدالرزاق داؤد نے کہا کہ پاکستان کی آئی ٹی انڈسٹری بیرون ملک اپنی ساکھ بنا سکتی ہے۔ ٹیکسٹائل انڈسٹری کی بہتری کے لیے مزید محنت کی ضرورت ہے، ملک میں برآمدات کے کلچر کوبہترکرنے کی ضرورت ہے، برآمدات اگربڑھے گی توملکی معیشت مضبوط ہوگی۔ دوسری طرف وزیراعظم عمران خان نے وزیراعلیٰ بلوچستان سے حالیہ بارشوں سے ہونے والے نقصانات کا جائزہ لیکررپورٹ تیارکرنے کا کہہ دیا ہے۔

 

وزیراعظم نے نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی کو ہدایت کی کہ گوادراورتربت میں متاثرین کو فوری امداد فراہم کی جائے۔ انہوں نے کہا کہ مشکل کی اس گھڑی میں عوام کو تنہا نہیں چھوڑا جائے گا اور وفاقی حکومت گھروں اور مویشیوں کو پہنچنے والے نقصان کے لیے ہرممکن مدد فراہم کرے گی۔

 

ملک میں کھادکابحران شدت اختیارکرگیا،کسان رُل گئے