صوبائی وزیر کے بھائی کے قتل کیس میں بڑی پیشرفت

صوبائی وزیر کے بھائی کے قتل کیس میں بڑی پیشرفت

 

 

لاہور(نیاٹائم ویب ڈیسک) قاتل مُکرگیا، صوبائی وزیرہاوسنگ اینڈفزیکل پلاننگ پنجاب ملک اسد کھوکھرکے بھائی ملک مبشر کھوکھر کےقاتلوں پرفردجرم عائدکردی گئی، عدالت نے دو ملزمان ناظم علی اور منصف پر فرد جرم عائد کی ۔

 

ملک مبشر کھوکھر کے قتل کیس میں اہم پیش رفت کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں، ایڈیشنل سیشن جج کی عدالت نے دو ملزمان ناظم علی اور منصف پرباضابطہ طورپر فرد جرم عائد کرنے کا حکم سنا دیاہے، دونوں ملزمان نے کمرہ عدالت میں صحت جرم سےمکمل طورپرانکارکردیا۔

ایڈیشنل سیشن جج عنبرین قریشی نے کیس ملک مبشرکھوکھرقتل کیس پر سماعت کی، ملزمان نے عدالت کے روبرو موقف اپنایاکہ ہم نے یہ قتل نہیں کیا ہم پر جھوٹا الزام لگایا جا رہا ہے، عدالت نے ملزمان کاموقف سننے کے بعدپراسیکیوشن گواہان کو 17 جنوری کو طلب کر لیا۔

 

میڈیارپورٹس کےمطابق مقدمہ میں ملوث ملزمان کو بکتر بند گاڑی میں عدالت لایا گیا ۔ پراسکیوشن نے چالان سکروٹنی کے بعد عدالت پیش کر رکھا ہے، چالان میں دو ملزمان کو ملک مبشر کھوکھرکی قتل میں نامزد کیا گیا ہے۔

 

پراسیکیوٹر الطاف حسین کا کہناتھا کہ پولیس نے تین نامعلوم ملزمان کو چالان میں شامل کر رکھا ہے، ملزم ناظم علی کو قتل کامرکزی جبکہ منصف کو بطور شریک ملزم نامزد کیا گیا ہے، ناظم علی نے شادی کی تقریب میں صوبائی وزیر کے بھائی پرفائرنگ کی تھی، فائرنگ سے مبشر کھوکھر موقع پر ہی جاں بحق ہو گیاتھا۔

 

عدالت عظمی اورعدالت عالیہ میں کیسزکی تعدادکتنی بڑھ گئی