عدالت عظمی اورعدالت عالیہ میں کیسزکی تعدادکتنی بڑھ گئی

عدالت عظمی اورعدالت عالیہ میں کیسزکی تعدادکتنی بڑھ گئی

 

لاہور(نیاٹائم ویب ڈیسک) سال 2021میں بھی ملکی عدلیہ کوججز کی کمی سے مقدمات کےدباو کاسامنارہا،رواں سال ملک بھر کی عدالتوں میں زیر التوا کیسز کی تعداد اکیس لاکھ پچپن ہزارسے بڑھ گئی۔

 

سال دو ہزار اکیس کےاختتام کےباوجود ملکی عدلیہ ججز کی کمی کی بناء پرمقدمات کے دباو کا سامنا کرتی رہی،اعدادوشمار کےمطابق سپریم کورٹ میں 52ہزار 6سو 72کیسزجبکہ لاہورہائیکورٹ میں 1لاکھ 95 ہزار 6سو 73 کیسزتاحال زیرالتواء ہیں۔

 

پنجاب کی ضلعی عدلیہ کوسب سے زیادہ تیرہ لاکھ پچیس ہزار پینسٹھ مقدمات کےدباو کاسامنا ہے، ممبرپاکستان بارکونسل شفقت محمود چوہان نےکہاہےکہ ججز کی کمی دور کئے بغیرزیرالتواء مقدمات نہیں نمٹائے جاسکتے۔

 

دوسری جانب سال کےاختتام پرسندھ ہائیکورٹ میں 74 ہزار 9سو54 ،پشاور ہائیکورٹ میں 43ہزاد 6 سو70 ،بلوچستان ہائیکورٹ میں 4ہزار 8سو 20 جبکہ اسلام آباد ہائیکورٹ میں 16ہزار 7سو 11مقدمات زیرالتواء ہیں۔

 

ایم فل اور پی ایچ ڈی میں داخلوں پر پابندی کی وجوہات سامنےآگئیں

 

 

 

عدالت عظمی اورعدالت عالیہ میں کیسزکی تعدادکتنی بڑھ گئی