ایبٹ آباد، سوات،  چترال اور مری میں شدید برف باری

ایبٹ آباد، سوات، چترال اور مری میں شدید برف باری

ایبٹ آباد (نیا ٹائم ) مری ،ایبٹ آباد اور شمالی علاقہ جات میں پہاڑوں پر شدید برفباری کے  بعد سردی کی شدت میں مزید اضافہ ہو گیا ۔

 

تفصیلات کے مطابق پہاڑی علاقوں میں برف باری سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا۔ نتھیاگلی میں 2 انچ، کالام میں 6 انچ، مالم جبہ میں 2 انچ اور گلیات میں 1 سے 1.5 انچ جب کہ ایبٹ آباد میں بارش اور برف باری سے سردی کی شدت میں اضافہ ہوگیا جبکہ برفباری کا  سلسلہ جاری ہے۔رپورٹس کے مطابق کزئی اور  وزیرستان کی طرح خیبر پختونخواہ کے ضلع کرم کا صدر مقام پارا چنار بھی ہر طرف سے  برف باری کے حسین مناظر اوربرف کے خوبصورت نظاروں کے بعد  مزید حسیں ہو گیا۔

 

 برفباری کے بعد نوجوان خصوصاً سیاح میکے زیڑان، تری منگل، شلوزان،  پاڑہ چمکنی اور دیگر سیاحتی مقامات کا رخ کر نے لگے اور دلکش نظاروں کو کیمرے کی آنکھ سے قید  کر رہے ہیں۔ برف باری کے باعث  مری جانے والےروڈز کو  مختلف مقامات پر بند کردیا گیا ہے جب کہ  اسکردو میں ضلع کھرمنگ، گانچھے اورشگر  میں برف باری کے بعد راستے بند ہو گے ہیں۔ برفباری شروع ہوتے ہی نوجوانوں نے برف پوش حسین وادیوں میں فرصت کا وقت گزارنے کے لیے سیاحتی مقامات کا رخ کر لیا ہے۔

 

 قبائلی باشندوں نے بتایا ہے  کہ بہت مزہ آرہا ہے کیونکہ کافی عرصے بعد برف کو دیکھنے کو مل رہی  ہے۔ علاوہ ازیں بالائی علاقوں کا دورہ کرنے والے شہریوں نے بھی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ پاراچنار کے سیاحتی مقامات پر توجہ دی جائے اور اس کی خوبصورتی کے لیے اقدامات کیے جائیں۔شہریوں کا مزید کہنا ہے کہ اگر ملک کے دیگر سیاحتی مقامات کی طرح پاراچنار کے سیاحتی مقامات پر بھی توجہ دی جائے تو نہ صرف سیاحوں کے لیے آسانیاں پیدا ہوں گی بلکہ یہ سیاحتی مقامات ملک کے لیے زرمبادلہ کمانے کا ذریعہ بھی بن سکتے ہیں۔

 

محکمہ موسمیات کی جانب سے بارش کی نوید سنادی گئی