الیکشن کمیشن نے وفاقی وزرا کی معافی کو قبول کر لیا

الیکشن کمیشن نے وفاقی وزرا کی معافی کو قبول کر لیا

 

اسلام آباد(نیا ٹائم) الیکشن کمیشن آف پاکستان  نے وفاقی وزرا اعظم سواتی اور فواد چوہدری کی معافی کو قبول کرلیا ہے۔

 

الیکشن کمیشن آف پاکستان  میں وزیر ریلوے  اعظم سواتی کے الیکشن کمیشن پر الزامات کے کیس کے سلسلے میں  سماعت ہوئی۔ وفاقی وزیراعظم سواتی  کمیشن  کمیشن کے سامنے پیش ہو گئے۔ممبرالیکشن  کمیشن نے وفاقی وزیر سے سوال کیا کہ اعظم سواتی صاحب آپ بے شک ایک مصروف آدمی ہیں  مگر الیکشن کمیشن کے سامنے  پیش کیوں نہیں ہوتے۔

 

الیکشن کمیشن سندھ کے ممبر کا وفاقی وزیراعظم سواتی کو مخاطب کرتےہوئے کہنا تھا  کہ آپ پرزیادہ ذمہ داری عائد ہوتی ہے ۔ تمام ادارے آپ کے اپنے ہیں۔ انہیں برا بھلا کہنا  کسی طور بھی درست نہیں ہے ۔ اس پر وزیر ریلوے  نے  جواب دیا  کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان  کو خودمختار بنانے کےلئے ہمیشہ آواز اٹھائی ہے۔

 

تاہم بعد میں  الیکشن کمیشن آف پاکستان  نےوزیر ریلوے اعظم سواتی  کی معافی کو قبول کرتے ہوئے انہیں  خبردار کیا کہ وہ اوروفاقی وزیر اطلاعات و نشریات  فواد چوہدری آئندہ الیکشن کمیشن پر  بیان  بازی کےحوالے سے  محتاط رہیں۔ اس سے پہلے وفاقی وزیر برائے اطلاعات  فواد چوہدری  کی جانب سے  بھی الیکشن کمیشن آف پاکستان سے غیر مشروط معافی مانگی گئی تھی۔

 

یاد رہےکہ وزیر ریلوے اعظم سواتی اور وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے الیکشن کمیشن آف پاکستان  پر نازیبا الزامات عائد کیے تھے جس کے بعد الیکشن کمیشن نے دونوں وزرا کواظہار وجوہ کے نوٹس جاری کیے تھے۔دونوں وفاقی وزرا   کی جانب سے پریس کانفرنس کے دوران الیکشن کمیشن پر سنگین نوعیت کے الزامات عائد کیے  تھے جس کے بعد الیکشن کمیشن نے نوٹس لیتے ہوئے دونوں وزرا کو شوکاز نوٹس جاری کیا تھا۔

 

الیکن کمیشن کے نوٹس کے بعد وفاقی وزیر اطلاعات ونشریات فواد چوہدری  الیکشن کمیشن  کے سامنے پیش ہو ئے تھے اور اپنے بیانات پر غیر مشروط معافی بھی مانگی تھی جس پر  ممبران الیکشن کمیشن  کا کہنا تھا کہ ابھی  فلحال آپ جا سکتے ہیں معافی دینے یا نہ دینے کے بارے میں بعد میں آگاہ کیا جائے گا۔

 

 

وزیر اعظم کی نااہلی کے لئےدائردرخواست خارج