خیبرپختونخوا میں شکست کیوں ہوئی ؟ تحقیقات کرانے کا فیصلہ

خیبرپختونخوا میں شکست کیوں ہوئی ؟ تحقیقات کرانے کا فیصلہ

پشاور ( نیا ٹائم ) وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان نے بلدیاتی انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کی شکست کی تحقیقات کروانے کا فیصلہ کر لیا ۔ صوبے کی حکمران پارٹی کو شکست کا سامنا کیوں کرناپڑا اس حوالے سے تحقیقات کی جائیں گی ۔

خیبر پختونخوا کے حالیہ بلدیاتی انتخابات میں پاکستان تحریک انصاف کی عبرتناک شکست کے بعد صوبے کی اپوزیشن جماعت جمیعت علمائے اسلام صوبہ بھر میں 16 تحصیل چیئرمین جبکہ تین میئر منتخب کروانے میں کامیاب ہوئی ہے ۔

صوبے میں پاکستان تحریک انصاف کی مایوس کن کارکردگی اور بدترین شکست کے معاملے پر وزیر اعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے تحقیقات کروانے کا فیصلہ کیا ہے ۔

ذرائع کے مطابق تحقیقات کے دوران صوبے میں بلدیاتی انتخابات میں شکست کی وجوہات جاننے کی کوشش کی جائے گی ، اور شکست کا باعث بننے والے اور پارٹی نظم و ضبط کی خلاف ورزی کرنے والوں کی نشاندہی کر کے ان کے خلاف کارروائی بھی کی جائے گی ۔

دوسری جانب وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی بیرسٹر محمد علی سیف کے مطابق پاکستان تحریک انصاف بلدیاتی انتخابات میں شکست کے معاملے کو انتہائی سنجیدگی سے لیتے ہوئے اس پر تحقیقات کروا رہی ہے تاکہ ہار کی وجوہات کا جائزہ لے کر پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کی جا سکے ۔

انہوں نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات میں پارٹی کی کارکردگی اتنی بری بھی نہیں رہی ، تاہم بعض اضلاع میں پارٹی امیدواروں کے آزاد حیثیت میں کھڑے ہونے سے بعض نشستوں پر پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ، اس کے باوجود کئی امیدواروں نے چیئرمین تحصیل کونسلز کی نشستیں جیتی ہیں ۔

واضح رہے حالیہ بلدیاتی انتخابات میں صوبہ خیبر پختونخوا میں حکمران پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں کو شکست کا سامنا کرنا پڑا ہے ۔ جس پر صوبائی وزیر اطلاعات اور سینئر صوبائی وزیر عاطف خان نے بیان دیتے ہوئے بڑھتی مہنگائی کو شکست کی وجہ قرار دیا تھا ۔

 

مسلم لیگ ن کا وزیر اعظم کون ہو گا ؟ مریم نواز نے بتا دیا