• Thursday, 29 September 2022
پنجاب بلدیاتی آرڈیننس جاری کر دیا گیا

پنجاب بلدیاتی آرڈیننس جاری کر دیا گیا

لاہور ( نیا ٹائم ) خیبرپختونخوا کے بعد پنجاب میں بھی بلدیاتی انتخابات کی تیاریاں شروع کر دی گئیں ، پنجاب بلدیاتی آرڈیننس کی تفصیلات جاری کر دی گئیں ۔ پنجاب میں بلدیاتی انتخابات کے لیے میئرز ، کونسلرز اور یوتھ کے امیدواروں کے انتخاب کے لیے عمر کی حد کا بھی تعین کر دیا گیا ہے ۔

حکومت پنجاب کی جانب سے جاری کئے گئی بلدیاتی آرڈیننس کی تفصیلات کے مطابق بلدیاتی انتخابات خفیہ رائے شماری کے تحت ہوں گے ۔ میئر ، ڈپٹی میئر اور کونسلرز مشترکہ پینل کے تحت انتخابات میں حصل لیں گے ۔ سیاسی جماعتوں کے ارکان یا آزاد امیدوار پینل کی صورت میں ہی انتخابات میں حصہ لے سکیں گے ۔ تاہم تمام سیٹوں کے لیے مشترکہ پینل نہ بنا سکنے والے انتخابات لڑنے کے اہل نہیں ہوں گے ۔

پنجاب بلدیاتی آرڈیننس کے مطابق سادہ اکثریت لینے والے امیدوار کو کامیاب تصور کیا جائے گا ۔ کونسلر کے انتخاب کے لیے امیدوار کی کم از کم عمر 21 سال جبکہ میئر اور ڈپٹی میئر کے لیے امیدوار کا کم از کم 25 سال ہونا ضروری ہو گا ۔ جبکہ یوتھ کونسلر کے لیے امیدوار کی عمر کم از کم 18 سال اور زیادہ سے زیادہ 32 سال ہونا لازم ہے ۔

آرڈیننس کے مطابق منتخب اراکین کونسل کے پہلے اجلاس کی تاریخ کے 60 دن کے اندر اندر رکنیت کا حلف لینے کے پابند ہوں گے ۔ ویلیج کونسنل اور نیبر ہڈ کونسل 3 ماہ کے اندر اندر کمیونٹی کونسلز اور پنچایت کونسلز بنانے کے بھی پابند ہوں گے ۔

پنجاب بلدیاتی آرڈیننس کے مطابق پنچایت کونسلز اور کمیونٹی کونسلز 5 ، 5 اراکین پر مشتمل ہوں گی ۔ بلدیاتی ادارے کا کوئی بھی منتخب رکن ان کونسلز کا ممبر نہیں بن سکے گا ۔ کونسلز کے اراکین کی نازمزدگی دو سال کے لیے کی جائے گی ۔

 

وفاقی وزیر فواد چوہدری کی ایک بار پھر الیکشن کمیشن پر تنقید