یوکرائن کا مسئلہ، امریکہ اور روس آمنے سامنے

یوکرائن کا مسئلہ، امریکہ اور روس آمنے سامنے

 

ماسکو(نیا ٹائم ویب ڈیسک) صدارتی انتخابات میں مداخلت کے بعد امریکا اور روس کے مابین تنازع اور کشیدگی کی وجہ اب یوکرائن بن گیا ہے۔عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر جوبائیڈن نےیوکرائن میں روسی مداخلت پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر روس کی طرف سے عسکری کارروائی کی گئی تو یوکرائن کی مدد کے لیے کھڑے ہوں گے۔امریکی صدر جوبائیڈن نے روس کو حملے نہ کرنے کی تاکید کرتے ہوئے مزید کہا کہ یوکرائن پر روسی حملے کو ناکام بنانے کے لیے امریکہ کی جانب سے ہر ممکن اقدام اُٹھایا جائے گا۔

واضح رہےکہ امریکہ کی خفیہ ایجنسی نے انٹیلی جنس انفارمیشن کی بنیاد پر اطلاع دی تھی کہ روس نے آئندہ سال کے اوائل میں یوکرائن پر حملہ کرنے کی پلاننگ کی ہے۔ یوکرین اور نیٹو پہلے بھی روس پر حملہ کرنے کی دھمکی دے چکے ہیں۔ ادھر روس نے امریکی دھمکی کو اس کے اندرونی معاملات میں مداخلت قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ کچھ لوگ یوکرائن پر حملے کے بہانے روس کی قومی سلامتی پر حملہ کرنا چاہتے ہیں، ایسے لوگوں کے نا پاک عزائم کو خاک میں ملا دیں گے

میڈیارپورٹس کےمطابق روس اور یوکرائن کے مابین تنازع کا آغاز 2014 سے ہوا تھا جب روس نے یوکرائن کے مشرقی صنعتی علاقے ڈونباس میں علیحدگی پسندوں کی بغاوت کی حمایت میں آواز اٹھاتے ہوئے ان کاساتھ دینے کااعلان کیاتھا۔

 

بابائے قوم کی عینک چوری