سیالکوٹ واقعہ پر سری لنکن وزارت خارجہ کا رد عمل

سیالکوٹ واقعہ پر سری لنکن وزارت خارجہ کا رد عمل

 

اسلام آباد ( نیا ٹائم ) گزشتہ روز سیالکوٹ میں سری لنکن  فیکٹری  منیجر پریانتھا کمارا کی ہلاکت پر سری لنکا کی وزارت خارجہ کا رد عمل بھی سامنے آگیا۔

 

اسلام آباد میں سری لنکن وزارت خارجہ  کے ترجمان سگیس واراگوناراتنے کی جانب سے جاری ہونے والے  بیان میں کہا گیاہےکہ  ہم سیالکوٹ  واقعے سے متعلق پاکستانی حکام کیساتھ تفصیلات کاجائزہ لے رہے ہیں۔ہمیں  توقع ہے پاکستانی حکام تحقیقات اور انصاف یقینی بنانے کیلئے   ہر ممکن  ضروری اقدامات کریں گے۔ترجمان وزارت خارجہ کا  مزید کہنا تھاکہ ہم  توقع کرتے ہیں   کہ  پاکستانی حکام تفتیش  اور انصاف کو یقینی بنانے کیلئے  مطلوبہ کارروائی کریں گے۔ہم سیالکوٹ واقعےکی تفتیش کےنتائج کےمنتظر ہیں۔ ہم وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے  ذمہ داروں کے خلاف کی کارروائی کی یقین دہانی  کو سراہتے ہیں ۔

دوسری طرف   ترجمان پنجاب  پولیس کا کہنا ہے  کہ  واقعے میں ملوث  ملزموں  کی گرفتاری کیلئے  چھاپے اور آپریشن رات سے جاری ہے اور  گزشتہ  رات کو بھی   پچاس سے زیادہ  جگہوں پر چھاپے مارے گئے ہیں ۔ترجمان پولیس کا مزید کہنا  ہے کہ واقعے کے بعد حراست میں لیے گئے ملزموں  سے تفتیش کا سلسلہ بھی  جاری ہے جس  کی مدد سے  دیگر دوسرے  ملزموں  کی  شناخت  میں مدد مل رہی ہے جبکہ واقعے کی ویڈیوز کی مدد سے بھی  ملزموں  کی  نشاندہی  اور تلاش کا عمل جاری ہے۔

 

یاد رہے کہ گزشتہ روز  سیالکوٹ  میں   فیکٹری کے   سری لنکن منیجر پریانتھا کمارا پر فیکٹری ورکرز نے توہین رسالت  کا الزام لگا کر حملہ کردیا، پریانتھا کمارا جان بچانے کیلئے بالائی منزل پر بھاگے لیکن فیکٹری ورکرز نے پیچھا کیا اور چھت پر گھیر لیا۔ اس انسانیت سوز خونی کھیل کو فیکٹری  کے گارڈز روکنے میں مکمل طور پر بے بس دکھائی دیے ۔ فیکٹری ورکرز منیجر کو مارتے ہوئے نیچے لائے  اور مار مار کر جان سے ہی مار دیا۔ لاش کو گھسیٹ کر فیکٹری سے باہر چوک پر لے گئے اور پھر آگ لگا دی۔

 

 

طاہراشرفی کا سری لنکن مینجر کے قتل پر ردعمل