تاریخِ کرکٹ کا منفرد ریکارڈ

تاریخِ کرکٹ کا منفرد ریکارڈ

 

1876 میں انگلینڈ کی سرزمیں سے شروع ہونے والا کھیل جسےکرکٹ کا نام دیا گیاآج بین الاقوامی کھیل بن گیا ہے، آج کرکٹ کھیلنے والے ہر کھلاڑی کی یہ خواہش اور جدوجہد ہوتی ہے کہ وہ کوئی ایسا ریکارڈ قائم کرے جس سے دنیا بھر میں اس کا نام روشن ہو اور ان کے بنائےریکارڈ کو یاد رکھا جائے۔

اپنے پہلے میچ میں سینچری بنانے والےبیٹرزتوبہت سے ہیں مگر دونوں فارمیٹ(ٹیسٹ،ون ڈے) کےپہلے میچ میں سینچری بنانے کااعزازپاکستانی بیٹرعابد علی کے نام رہا ،جنہوں نے 150 سالہ کرکٹ کی تاریخ میں اپنے پہلے ٹیسٹ اور ون ڈے میں سینچری بنائی ہے۔عابد علی نےدبئی میں آسٹریلیا کےخلاف اپنے پہلے ون ڈے میچ میں سینچری بنائی اور راولپنڈی میں سری لنکا کے خلاف پہلے ٹیسٹ میں سنچری بنا کر دنیا کرکٹ میں منفرد ریکارڈ قائم کرکے ناقدین کرکٹ کو حیران کردیا ۔

عابد علی نے 15 ٹیسٹ میچزمیں پاکستان کی نمائندگی کی اور پچاس کی اوسط سے 1111 رنز بناچکےہیں۔عابد علی کے ٹیسٹ کیریئر میں چارسینچریاں اور تین نصف سنچریاں شامل ہیں۔ جن میں 215 رنز کی بہترین اننگز بھی ان کے نام کیساتھ جڑی ہوئی ہے۔پاکستانی بلے بازنے بنگلہ دیش میں پہلے ٹیسٹ کی پہلی اننگ میں سینچری اور دوسری اننگ میں اکانوے رنز بنا کر سب کو حیران کردیا اور مین آف دی میچ کا ایوارڈ بھی حاصل کیا۔

عابد علی نے چھ ون ڈے میچز میں پاکستان کی نمائندگی کرتے ہوئے ایک سینچری اور ایک نصف سینچری کی بدولت 39 کی اوسط سے 234 رنز بنائے ہیں۔ اس طرح 126 فرسٹ کلاس ٹیسٹ میچز میں 40 کی اوسط سے 8576 رنز بنا چکے ہیں۔ ٹیسٹ میچز میں عابد علی 24 سنچریاں 34 نصف سنچریاں بنا چکے ہیں۔ عابد علی فرسٹ کلاس کرکٹ میں 249 کی بہترین اننگز کھیل چکے ہیں۔ شائقین اور ناقدین کرکٹ عابد علی کو پاکستانی ٹیم کےلیے مستقبل کا بہترین بیٹرقراردے رہےہیں۔

 

(نوٹ:مندرجہ بالاتحریربلاگرکاذاتی نقطہ نظرہے،ادارہ کااس سے متفق ہوناضروری نہیں)