• Saturday, 04 December 2021
پٹرولیم ڈیلرز ڈٹ گئے

پٹرولیم ڈیلرز ڈٹ گئے

لاہور / اسلام آباد / کراچی ( نیا ٹائم ) پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن نے مذاکرات کے حوالے سے حکومتی دعوے مسترد کرتے ہوئے ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کر دیا ۔ پٹرولیم ڈیلرز کی ہڑتال کے حوالے سے حکومت نے دعویٰ کیا تھا کہ ڈیلرز کے کچھ نمائندوں کے ساتھ خفیہ مذاکرات کئے جا رہے ہیں ۔ جس کے بعد معاملات جلد طے ہو جائیں گے ۔ پٹرولیم ڈویژن حکام کا کہنا تھا کہ ڈیلرز کی جانب سے جواب کا انتظار کیا جا رہا ہے امید ہے جلد ہڑتال ختم ہو جائے گی ۔ پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے عہدیداروں سے بھی مکمل رابطے ہیں ، جلد پیشرفت ہو گی ۔

پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے نمائندوں نے حکومت سے کسی بھی طرح کے رابطوں اور مذاکرات کی تردید کرتے ہوئے ملک بھر میں ہڑتال جاری رکھنے کا اعلان کر دیا ہے ۔ پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کی جانب سے کہا گیا ہے کہ ہم سے کسی نے بھی رابطہ نہیں کیا۔ جب رابطے ہوں گے تو دیکھا جائے گا ۔

پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے سیکرٹری اطلاعات نے کہا ہے کہ حکومت کی جانب سے تاحال مذاکرات کے لیے کوئی رابطہ نہیں کیا گیا ، حکومتی زبانی یقین دہانیوں پر اعتبار کرنا مذاق ہو گا ۔ ملک بھر کے پٹرول پمپس کی بندش مطالبات کی منظوری تک جاری رہے گی ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے 3 نومبر کو بھی سمری ارسال کرنے کا وعدہ کیا تھا لیکن اس پر عملدرآمد نہیں ہوا ۔ حکومت پٹرول پمپس پر تیل فراہمی کے جھوٹے دعوے کر رہی ہے ۔

پٹرولیم ڈیلرز ایسوسی ایشن کے ایک رہنما نے میڈیا کو بتایا کہ حکومت کی جانب سے فی لیٹر مارجن میں ایک روپیہ اضافے کی تجویز ہے لیکن ہم اسے مسترد کرتے ہیں ۔ مہنگائی کے تناسب سے مارجن میں بھی اضافہ کیا جائے ۔ واضح رہے فی لیٹر ڈیزل مارجن میں 75 پیسے جبکہ پٹرول پر ڈیلرز مارجن میں فی لیٹر ایک روپے اضافہ تجویز کیا گیا ہے جو 3.90 سے بڑھ کر 4.90 ہو جائے گا ۔ ود ہولڈ نگ ٹیکس منہا ہونے کے بعد فی لیٹر پٹرول پر ڈیلر ز مارجن بڑھ کر 3.80 روپے ہو جائے گا ۔

رابطے میں رہیے

نیوز لیٹر۔

روزانہ کی بڑی خبریں حاصل کریں بذریعہ