• Saturday, 04 December 2021
پاک بھارت ٹاکرا

پاک بھارت ٹاکرا

 

کھیل کا میدان ہو یا جنگ کا،،، پاکستان اور بھارت ہمیشہ خطرناک حریف قراردیے گئےہیں۔ کرکٹ ہاکی یا سکواش کا میچ ہو تو میدان میں حالات کسی جنگ سے کم نہیں ہوتے۔پاک بھارت تناو کو کم کرنے کے لیے بعض پاک بھارت مشترکہ دوستوں نے ان ممالک کے درمیان کرکٹ سیریز کروانے کا فیصلہ کیا ہے۔ اس سلسلے میں دبئی کرکٹ ایسوسی ایشن کے صدر عبدالرحمان فلک ناز نے پاک بھارت کرکٹ سیریز کرانے کے لیے کوششیں شروع کردی ہے۔پاک بھارت سیریز دبئی میں کھیلی جائےگی۔ یہ سیریزٹی ٹوئنٹی یا ون ڈے پر مشتمل ہوگی۔ اس سیریز سے جہاں ایک جانب کرکٹ شائقین کو ایک بہترین کرکٹ سیریز دیکھنے کو ملے گی تو وہیں دوسری جانب پاک بھارت بڑھتے ہوئےاختلافات میں کچھ کمی آسکے گی۔
اس سلسلے میں دبئی کرکٹ ایسوسی ایشن کے صدر عبدالرحمان فلک ناز کا کہنا ہے کہ ہر سال پاک بھارت کرکٹ سیریز کروانے کا فیصلہ کیا گیا ہے،اس ضمن میں بھارت کرکٹ ایسوسی ایشن سے رابطہ کیاہے اور بھارت کرکٹ بورڈ میں موجود اپنے دوستوں سے خصوصی طور پر اس سیریز کے انعقاد کے لیے اپنا کردار ادا کرنے کی درخواست کی ہے۔ذرائع کا کہنا ہےکہ پاک بھارت کرکٹ بورڈ نے نیم رضامندی ظاہر کی ہے،انڈیا نے پاک بھارت سیریز کوبھارتی حکومت کی اجازت سے مشروط کیا ہے جبکہ پاکستان کرکٹ بورڈ کے چیئرمین رمیزراجہ کاگزشتہ دنوں کہنا تھا کہ پاک بھارت کرکٹ سیریز کے امکانات بہت کم ہیں، البتہ ٹرائی اینگلرسیریزہوسکتی ہے۔دبئی کرکٹ ایسوسی ایشن پاک بھارت کرکٹ بورڈ کے چیئرمین، صدر اور اعلی عہدے داران سے رابطے میں ہے ۔

اگرپاکستان کرکٹ ٹیم کے شیڈول پر ایک نظر ڈالیں تواگلاسال گرین شرٹس کامصروف ترین سال ہوگا۔ پاکستان کرکٹ ٹیم نے 2022 میں دس ٹیسٹ میچ ،نو ون ڈے، آٹھ ٹی ٹوئنٹی میچ کھیلنے ہیں ۔پاکستان کرکٹ ٹیم 2022 کا آغاز پی ایس ایل سیون سے ہوگا۔آسٹریلین کرکٹ ٹیم کا دورہ پاکستان، ویسٹ انڈیز کے درمیان سیریز، انگلینڈ کی ٹیم کی پاکستان آمد ، سری لنکا کا دورہ ،ایشیا ٹی ٹوئنٹی چیمپیئن شپ ،نیوزی لینڈ کا دورہ ،پاکستان کرکٹ ٹیم کی مصروفیات کو دیکھتے ہوئے لگتا ہےکہ عبدالرحمن فلک ناز پاک سیریز 2022میں تو نہیں کروا سکیں گے البتہ 2023 میں شائقین کرکٹ کو پاک بھارت سیریزدیکھنے کومل سکتی ہے۔

 

(نوٹ:مندرجہ بالاتحریربلاگرکاذاتی نقطہ نظرہوسکتاہے،ادارہ کااس سے متفق ہوناضروری نہیں)

رابطے میں رہیے

نیوز لیٹر۔

روزانہ کی بڑی خبریں حاصل کریں بذریعہ