• Thursday, 09 December 2021
مریم نواز لیگی رہنماؤں کی بھی ویڈیوز بنوا رہی ہیں ، فواد چوہدری

مریم نواز لیگی رہنماؤں کی بھی ویڈیوز بنوا رہی ہیں ، فواد چوہدری

اسلام آباد ( نیا ٹائم ) وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز پر الزام لگایا ہے کہ وہ اپنی پارٹی کے لوگوں کو بھی قابو کرنے کے لیے ان کی بھی ویڈیوز بنوا رہی ہیں ۔ فواد چوہدری نے کہا کہ ماضی میں کسی بھی سیاسی جماعت نے ایسی حرکتیں نہیں کیں جیسی مریم نواز اور ان کا ٹولہ کر رہا ہے ۔ وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار سے منسوب کی گئی آڈیو جعلی ثابت ہو چکی ہے ، جو بھی یہ کھیل کھیل رہا ہے ، وہ سب کے سامنے ہے ، مریم نواز اپنے لوگوں کو بھی قابو میں رکھنے کے لیے شاید ان کی بھی ویڈیوز بنوا رہی ہوں ۔

اسلام آباد میں وفاقی کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے کہا کہ ن لیگ کی جانب سے ثاقب نثار جیسی ویڈیوز نئی بات نہیں ، ججز پر دباؤ ڈالنے کے لیے پہلے بھی ایسی مہمات چلائی گئیں ۔

وزیر اطلاعات نے سپریم کورٹ بار کی جانب سے جاری کی گئی پریس ریلیز کا خیر مقدم کرتے ہوئے کہا کہ ججز کے خلاف مہم سے سپریم کورٹ بار نے بھی لاتعلقی کا اعلان کیا ہے جس کہ خوش آئند بات ہے ۔ سپریم کورٹ بار کی پریس ریلیز آئین پاکستان کے عین مطابق ہے ۔

الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے حوالے سے بات کرتے ہوئے وفاقی وزیر نے کہا کہ اگلے عام انتخابات بھی ای وی ایم پر ہونے چاہئیں اور ایسا ہی ہو گا ۔ عدالت سے جو بھی احکامات آئیں گے ان پر عملدرآمد کریں گے ۔ الیکٹرانک ووٹنگ مشین پر کمیٹی بھی قائم کر دی گئی ہے جو الیکشن کمیشن سے رابطہ قائم کرے گی ۔ الیکشن کمیشن کو الیکٹرانک ووٹنگ مشین کے حوالے سے جو بھی  مدد درکار ہو گی وہ ہم دیں گے ۔

انہوں نے مسلم لیگ ن کے رہنماؤں پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف اور مسلم لیگ ن کو حکومت کا شکر گزار ہونا چاہئے کہ اب نواز شریف کے بیٹے بھی انتخابات میں ووٹ کاسٹ کر سکیں گے ۔

مہنگائی کے حوالے سے گفتگو کرتے ہوئے وفاقی وزیر فواد چوہدری نے کہا کہ اگلے پندرہ روز میں چینی کی قیمتیں کم ہو کر 85 روپے فی کلو تک آ جائیں گی ۔ بد قسمتی سے کراچی میں اشیائے ضروریہ کی قیمتیں باقی ملک سے بہت زیادہ ہیں ۔ پیاز ، ٹماٹر ، اور ادرک کی قیمتیں کم ہوئی ہیں ۔ تیل اور بجلی کی قیمتوں میں بھی اضافے کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے ۔ اٹھارویں ترمیم کے بعد وفاق صرف پالیسی دے سکتا ہے تاہم اس پر عملدرآمد صوبائی حکومتوں نے خود کرنا ہوتا ہے ۔

رابطے میں رہیے

نیوز لیٹر۔

روزانہ کی بڑی خبریں حاصل کریں بذریعہ