• Wednesday, 20 October 2021
گورنر سندھ کی نئی منطق

گورنر سندھ کی نئی منطق

کراچی ( نیا ٹائم ) گورنر سندھ عمران اسماعیل کہتے ہیں پی ٹی آئی حکومت نے پاکستان میں مہنگائی کنٹرول کی ہے ، یورپ ، جاپان سمیت پوری دنیا مہنگائی سے متاثر ہوئی ہے ۔ گورنر ہاؤس میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے گورنر سندھ عمران اسماعیل کا کہنا تھا کہ ہر طرف مہنگائی کا چرچا ہے ، اپوزیشن اور ہارے ہوئے سیاستدان مہنگائی کے حوالے سے پراپیگنڈا کرتے پھرتے ہیں ۔ہماری حکومت پر تنقید کرتے ہیں کہ ہم نے قوم کو بھکاری بنا دیا ہے ، پروپیگنڈا کرتے ہیں کہ عمران خان کی وجہ سے مہنگائی بڑھ رہی ہے ۔ آج بھی پنجاب میں آٹے کی قیمت 55 روپے جبکہ سندھ میں آٹے کی قیمت 74 روپےتک پہنچ چکی ہے ،مہنگے آٹے کی ذمہ دار سندھ حکومت ہے ۔  گورنر سندھ نے ایک سوال کے جواب میں کہا کہ سول اور ملٹری اسٹیبلشمنٹ ایک پیج پر ہیں اور آئندہ بھی رہیں گے ، تمام تقرریاں صلاح مشورے سے ہوتی ہیں ، نہ ادارے حکومت کو گرانا چاہتے ہیں نہ ہی حکومت اداروں کو ۔ گورنر سندھ عمران اسماعیل نے گرین لائن بس منصوبے پر بات کرتے ہوئے کہا کہ گرین لائن کی باقی 40 بسوں کی کھیپ کل کراچی پہنچ جائیں گی ۔ جس کے بعد گرین لائن منصوبے کی بسوں کی کل تعداد 80 تک پہنچ جائے گی ۔ انہوں نے کہا کہ گرین لائن بسوں کے ڈرائیورز کی ٹریننگ چل رہی ہے اور آئندہ ایک ماہ میں گرین لائن بسز کو سڑکوں پر لانے کی کوشش کریں گے جبکہ کراچی سرکلر ریلوے منصوبے کو مکمل ہونے میں مزید دو سال لگیں گے ۔ ملک میں جاری احتساب کے عمل پر سوال کا جواب دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عمران خان پاکستانی تاریخ کے پہلے حکمران ہیں جنہوں نے اپنے ساتھیوں کا بھی احتساب کیا ، اپنے لوگوں کے خلاف بھی انکوائری کمیشن بنایا ۔ سندھ میں صحت کارڈ نہ ملنے کی ذمہ داری بھی انہوں نے سندھ حکومت پر ڈالتے ہوئے کہا کہ صوبائی حکومت کی جانب سے صحت کارڈ کو رد کرنے کی وجہ سے ہم سندھ میں صحت کارڈ نہیں دے سکے ۔ انہوں نے کہا کہ سندھ میں گھروں کی تعمیر میں بھی سندھ حکومت رکاوٹ ہے ۔ پریس کانفرنس کے دوران وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے بحری امور محمود مولوی ، ترجمان وفاقی وزیر خزانہ مزمل اسلم اور سندھ اسمبلی میں قائد حزب اختلاف حلیم عادل شیخ بھی گورنر سندھ کے ہمراہ موجود تھے ۔