• Saturday, 04 December 2021
کرے کوئی ، بھرے کوئی

کرے کوئی ، بھرے کوئی

بیجنگ ( نیا ٹائم ویب ڈیسک ) چینی پارلیمنٹ میں آنے والے نئے بل میں حیران کن شق شامل ، مجوزہ بل کے مطابق بچوں کے نامناسب رویے پر اب سزا والدین کو بھگتنا پڑے گی ۔ قانونی مسودے کے مطابق بچوں کے نا مناسب رویے پر ان کے والدین کو بچوں کی بہتر تربیت کے لیے ایک پروگرام سکھایا جائے گا  جس میں بتایا جائے گا کہ بچوں کی بہتر تربیت کیسے کی جائے ۔ عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق مجوزہ قانونی مسودے میں درج ہے کہ اگر دوران تربیت بچوں کے نامناسب رویے یا ان میں مجرمانہ برتاؤ پایا گیا تو اس صورت میں بچوں کے سرپرست کی سرزنش ہو گی ۔ چینی نیشنل پیپلز کانگریس کی قائمہ کمیٹی برائے قانون کے ترجمان زانگ تیوی کے مطابق بچوں میں نامناسب اور غلط رویے کی کئی وجوہات ہو سکتی ہیں جس میں سب سے اہم وجہ ان کی تعلیم و تربیت میں کمی ہے ۔ مجوزہ بل کے مطابق والدین پر زور دیا گیا ہے کہ وہ بچوں کو آرام ، کھیل اور ورزش کے لیے مناسب وقت دیں ۔ واضح رہے چین میں بچوں کے لیے آن لائن گیمز کھیلنے کے لیے بھی اوقات کار مقرر کئے گئے ہیں ، چینی وزارت تعلیم نے بچوں کو آن لائن گیمز کھیلنے کے لیے صرف جمعہ ، ہفتہ اور اتوار مطلب 3 روز کی اجازت دے رکھی ہے ۔ دوسری جانب چینی وزارت تعلیم نے بچوں کے ہوم ورک اور لازمی مضامین کی ٹیوشن کو بھی بچوں پر اضافی بوجھ قرار دیتے ہوئے پابندی لگا رکھی ہے ۔ مجوزہ قانون پاس ہونے کی صورت میں بچوں کی کسی بھی غیر اخلاقی حرکت ، نامناسب رویے پر ان کے والدین کو سزا بھگتنا پڑے گی اور انہیں بچوں کی تربیت کے لیے باقاعدہ طور پر کورس کرنا پڑے گا ۔

رابطے میں رہیے

نیوز لیٹر۔

روزانہ کی بڑی خبریں حاصل کریں بذریعہ