• Wednesday, 20 October 2021
پاک ایران سرحد کاروبار کا مرکز بنے گی ، عمران خان

پاک ایران سرحد کاروبار کا مرکز بنے گی ، عمران خان

اسلام آباد ( نیا ٹائم ) وزیر اعظم پاکستان عمران خان نے پاک ایران سرحد کو امن و دوستی کی سرحد قرار دیتے ہوئے سرحد پر مارکیٹ بنانے کی تجویز دی ہے ، جس حوالے سے ان کا کہنا ہے کہ مارکیٹیں بننے سے مقامی افراد کے لیے کاروبار کے مواقع پیدا ہوں گے ۔ وزیر اعظم عمران خان نے ایرانی چیف آف جنرل سٹاف میجر جنرل محمد باقری سے ملاقات کے دوران کہا کہ پاک ایران سرحد پر کاروبار کے مراکز قائم کئے جائیں گے جس سے مقامی لوگوں کی زندگیوں میں انقلاب آئے گا ۔ ملاقات کے دوران دو طرفہ تعلقات اور خطے کی صورتحال بھی زیر بحث آئی ۔ وزیر اعظم عمران خان نے ایرانی وفد سے ملاقات میں معیشت اور توانائی سمیت مختلف شعبوں میں تجارت اور تعاون بڑھانے کی ضرورت پر زور دیتے ہوئے کہا کہ پاک ایران سرحد پر دو اضافی سرحدی کراسنگ پوائنٹس کھلنے سےآنے جانے میں آسانی کے ساتھ ساتھ مقامی افراد کے لیے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے ۔ انہوں نے مقبوضہ جموں و کشمیر کے تنازع پر  پاکستانی موقف کا ساتھ دینے پر ایران کے کردار کی بھی تعریف کی ۔ وزیر اعظم عمران خان نے ایرانی چیف آف جنرل سٹاف میجر جنرل محمد باقری سے ملاقات کے دوران افغانستان کی صورتحال پر بھی گفتگو کی اور کہا کہ افغانستان کی بحالی کے لیے بین الاقوامی اپنا مثبت کردار ادا کرے ، اس سے افغانستان میں کسی بڑے المیے سے بچا جا سکے گا ۔ انہوں نے کہا کہ افغانستان کے پڑوس میں ہونے کی وجہ سے پاکستان اور ایران براہ راست افغانستان سے جڑے ہیں اور یہاں کا امن و سلامتی کا انحصار پر امن افغانستان سے جڑا ہے ۔ وزیر اعظم عمران خان نے ایرانی صدر ابراہیم رئیس کے لیے نیک تمناؤں کا بھی اظہار کیا اور انہیں دورہ پاکستان کی دعوت دینے کا بھی اعادہ کیا ۔