پاکستان بمقابلہ بنگلہ دیش

پاکستان بمقابلہ بنگلہ دیش

 

پاکستان کرکٹ ٹیم اور بنگلہ دیش کی کرکٹ ٹیمیں شیربنگلہ اسٹیڈیم ڈھاکہ میں مدمقابل ،دونوں ٹیموں کے مابین سیریز کے تین میچز 19، 20 اور 22 نومبر کو شیر بنگلہ کرکٹ اسٹیڈیم ڈھاکہ میں کھیلے جارہے ہیں۔پاکستان نے پہلے ٹی ٹوئنٹی میچ میں بنگلہ دیش کوچاروکٹوں سےشکست سے دی۔ پانچ سال بعد یہ پہلا موقع ہو گا کہ جب پاکستان بنگلہ دیش میں کوئی دو طرفہ سیریز کا میچ کھیل رہاہے۔

دونوں ٹیمیں اس سےقبل 12 مرتبہ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل میچ میں مدمقابل آچکی ہیں۔ جہاں 10 مرتبہ پاکستان نے فتح حاصل کی اور بنگلہ دیش نےدو میچز میں کامیابی حاصل کی تھی ۔ جن میچز میں بنگالی کرکٹ ٹیم فتح یاب ہوئی تھی یہ دونوں میچز بنگلہ دیش میں ہی کھیلے گئے تھے۔ ہوم گراؤنڈ میں کھیلے گئے4 ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچز میں بنگلہ دیش کا پاکستان کے خلاف جیت کا تناسب 50 فیصد رہا۔تاہم پاکستانی ٹیم نے حالیہ ٹورکےدوران پہلے معرکے میں ہی کامیابی حاصل کرکے اپنا ریکارڈمزیدبہتربنالیاہے، پاکستان تیرہ میچز میں سے گیارہ میچز جیت کربنگالی ٹیم پراپنی سبقت برقراررکھےہوئے ہے۔

اُدھر پاکستان کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم نے بنگلہ دیش کے خلاف پہلےٹی ٹونٹی انٹرنیشنل میچ کے لیے 12 رکنی قومی ٹی ٹونٹی اسکواڈ کا اعلان کیاتھا۔ پاکستان کے کپتان بابر اعظم صرف 62 اننگز میں تیز ترین 2500 ٹی ٹونٹی انٹرنیشنل رنز بنانے والے دنیا کے تیز ترین بیٹر بن چکے ہیں۔ اس سے قبل بھارت کے ویرات کوہلی 68 اننگز میں یہ ریکارڈ اپنے نام کرنے میں سرخروہوئے تھے۔

دوسری جانب محمد رضوان کیلنڈر ایئر میں سب سے زیادہ ٹی ٹوئنٹی انٹرنیشنل رنز بنانے والے کھلاڑی ہیں۔ انہوں نے 23 میچز میں86.08 کی اوسط سے 1033 رنز بنارکھے ہیں۔ اس دوران ان کا اسٹرائیک ریٹ 136.45 رہا ہے۔ اس میں ان کی ایک سینچری اور 10 نصف سینچریاں شامل ہیں۔