• Wednesday, 20 October 2021
وزیراعظم غلط چیز پر غلط انداز میں کھڑے ہیں

وزیراعظم غلط چیز پر غلط انداز میں کھڑے ہیں

اسلام آباد(نیاٹائم ویب ڈیسک)پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (پی ڈی ایم) اور جمعیت علمائے اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ لیفٹیننٹ جنرل آرمی چیف کے حکم کا پابند ہے جب کہ وزیراعظم ایک غلط چیز پر غلط انداز میں کھڑے ہیں
اسلام آباد میں پریس سے بات چیت کرتے ہوئےمولانا فضل الرحمان کا کہنا تھاکہ ہرلمحے صورت حال بدل رہی ہے۔ بڑی سمجھداری سے ان حالات سےپچنا ہوگا۔
ان کا کہنا تھاکہ قانون کے مطابق فیصلے کریں گے تو مشکل کاسامنا نہیں کرنا پڑے گا۔ فکر اس چیزکی ہے کہ ملک کو کسی چیز کا نقصان نہ پہنچے۔
اس وقت کی صورت حال پر مولانا فضل الرحمان کا کہنا تھاکہ فوج واحد منظم ادارہ ہے جو وطن پاکستان کی واحد اُمید ہے۔
انکا کہنا تھاکہ لیفٹیننٹ جنرل آرمی چیف کےماتحت ہوتا ہے۔ یہ اختیاراتنا زیادہ بھی نہیں کہ کوئی اس پر ڈٹ جائے۔ سربراہ پی ڈیم ایم کا کہنا تھا کہ وزیراعظم ایک غلط چیز پر جاہلانہ اندازمیں کھڑے ہیں۔
سربراہ پی ڈی ایم کا کہنا تھاکہ لیفٹیننٹ جنرل آرمی چیف کے انڈر ہے۔ وزیراعظم کو اس حد تک مداخلت نہیں کرنی چاہیے کہ نظام خراب ہو، تمام معاملات مشاورت کے ساتھ آگے بڑھتے ہیں۔
ان کامزید کہنا تھاکہ مشکلات اسی وجہ سے آئیں کہ پارلیمنٹ میں فوج اور فوج کے کام میں کسی اور نے مداخلت کرنا چاہی۔
حکومت پر خرف تنقید بناتے ہوئے فضل الرحمان کا کہنا تھاکہ ملک پر قابض لوگوں سے قوم کو آزاد کروانا چاہتےہیں اور یہ حکمران پاکستان کو ڈبونے کےلئے آئے ہیں۔

 

وزیر اعظم کیا چاہتے تھے ؟ عامر ڈوگر نے بتا دیا